امریکی سفارتخانے کی توسیع کے خلاف درخواست ناقابل سماعت قراردے کر خارج

امریکی سفارتخانے کی توسیع کے خلاف درخواست ناقابل سماعت قراردے کر خارج

اسلام آباد(آن لائن) سپریم کورٹ نے امریکی سفارتخانے کی توسیع کے خلاف درخواست کو ناقابل سماعت قرار دیتے ہوئے خارج کردیا۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دئے کہ ایسے معاملات عدالت میں آنے والے نہیں ،یہ سفارتی نوعیت کا معاملہ ہے ۔بدھ کے روز امریکی سفارتخانے کی توسیع کے خلاف وطن پارٹی کے بیرسٹر ظفر اللہ کی درخواست پر چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے سماعت کی ۔سماعت شروع ہوئی تو چیف جسٹس نے درخواست گزار کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ پہلے درخواست کے قابل سماعت ہونے پر دلائل دیں درخواست گزار نے موقف اختیار کیا کہ 56 ایکڑ پر امریکن کیلئے کنٹونمنٹ بنائی گئی ہے، چیف جسٹس نے کہا کہ یہ معاملہ سفارتی نوعیت کا ہے۔درخواست گزار نے کہا کہ اضافی جگہ پر ہوٹل بھی بنایا گیا جو خلاف قانون ہے، امداد دینے کے نام پر زمین حاصل کی گئی۔ چیف جسٹس نے کہا کہ یہ معاملات عدالتوں میں آنے والے نہیں، یہ پالیسی کا معاملہ ہے درخواست گزار کا حق متاثر نہیں ہوا، سپریم کورٹ نے درخواست ناقابل سماعت قرار دے کر خارج کردی۔

مزید : صفحہ آخر


loading...