ایم کیو ایم کی دو خواتین ارکان سندھ اسمبلی کی پی ایس پی میں شمولیت

ایم کیو ایم کی دو خواتین ارکان سندھ اسمبلی کی پی ایس پی میں شمولیت

کراچی(آن لائن)ایم کیو ایم پاکستان کی دو خواتین ارکان سندھ اسمبلی نے پی ایس پی میں شمولیت اختیار کرلی ،کراچی میں پاک سرزمین پارٹی کے مرکزی آفس پاکستان ہاؤس میں پریس کانفرنس سے خطاب کے دوران ایم کیو ایم پاکستان کی ایم پی ایز ناہید بیگم اور نائیلہ منیر نے پی ایس پی میں شمولیت کا اعلان کیا۔اس موقع پر پی ایس پی کے سربراہ مصطفیٰ کمال نے کہا کہ ہم نے کسی سے انتقام لینے کیلئے یہ کام شروع نہیں کیا تھا،بہادر آباد اور پی آئی بی کے دوستوں سے کہتا ہوں کہ اپنے فیصلے پر نظر ثانی کریں،کھلے دل سے دعوت دیتا ہوں دلوں کو صاف کر کے ہمیں جوائن کر لیں۔انہوں نے کہا کہ مردم شماری اور حلقہ بندیوں میں کراچی سے ناانصافی کی گئی،آئیں شہر سے ناانصافیوں کے خلاف مل کر جدوجہد کرتے ہیں۔پی ایس پی نے ایم کیو ایم میں صورت حال پر بیان بازی نہیں کی،ہمارا راستہ صحیح ہے دونوں گروپ ہمارے ساتھ آجائیں۔مصطفیٰ کمال نے کہا کہ ایم کیو ایم کا برانڈ بدنام ہو گیا ہے،ایم کیو ایم کے نام جوڑ کر اس شہر سے جو سلوک چاہے کر لیں،ڈی لمیٹیشن میں کراچی کے ساتھ زیادتی کی گئی جس کے لئے آئیں مل کر جدوجہد کرتے ہیں،یہ شہر لا وارث نہیں ہے اسکو لاورث سمجھنے والے احمقوں کی جنت میں رہتے ہیں۔اس موقع پر ناہید بیگم کا کہنا تھا کہ میرا شہید کی فیملی سے تعلق ہے،میں نے کمٹمنٹ دکھائی،امید تھی کہ پارٹی نسلوں کی بقاء کیلئے کام کرے گی،ایم کیو ایم آپس کی چپقلش کا شکار ہوگئی،میرے لئے پی ایس پی اب بہترین پلیٹ فارم ہے ۔نائلہ منیر کا کہنا تھا کہ مجھ پر کوئی دشمنی میں بھی کرپشن کا الزام نہیں لگا سکتا ،ایم کیو ایم میں صرف انفرادی سوچ رہ گئی ہے،پی ایس پی میں اجتماعیت نظر آئی،سوچا تھاکہ سیاسی زندگی کو خیرآباد کہہ دوں گی،مصطفی کمال کراچی کے عوام کی امید ہے اور میں ان کے ساتھ کھڑی ہوں۔

خواتین ارکان

مزید : صفحہ آخر


loading...