گرین لائن ٹرین میں کھانے کی لازمی فراہمی کی سروس معطل

گرین لائن ٹرین میں کھانے کی لازمی فراہمی کی سروس معطل

لاہور(نمائندہ پاکستان)گرین لائن ٹرین میں کھانے کی لازمی فراہمی معطل کرتے ہوئے ڈائننگ کار بحال اورکرائے میں کمی کر دی گئی۔ تفصیلات کے مطابق اسلام آباد اور راولپنڈی کے درمیان کرایہ 5990 سے کم کر کے 5340 کر دیا گیا ہے جبکہ لاہور اور کراچی کیدرمیان کرایہ 5450 سے کم کر کے 4950 روپے کر دیا گیا ہے اور بہاولپور سے کراچی کا کرایہ 3820 سے کم ہو کر 3490 ہو گیا ہے ترجمان پاکستان ریلوے کا کہنا ہے کہ کھانے کے اخراجات کے ساتھ سیٹ کی بکنگ کرانے والوں کو وزیر ریلویز خواجہ سعد رفیق کی ہدایت پر ریفنڈ کی سہولت دے دی گئی ہے کھانے کے اخراجات کے ساتھ بکنگ کروانے والے ہر مسافر کو 680 روپوں تک ریفنڈ، ریلوے نے گذشتہ روز 99 مسافروں کو نوے ہزار سے زائد ریفنڈ دیا ہے۔گرین لائن کے مسافر اب ریلوے کے مینیو اور ریٹس کے مطابق لنچ اور ڈنر کر سکتے ہیں، وہ 220 روپوں میں ڈنر، 90 روپوں میں ناشتہ اور 25 روپوں میں چائے لے سکتے ہیں ترجمان ریلوے کے مطابق گرین لائن میں لنچ، ڈنر اور ہائی ٹی کی سہولت ٹیکنیکل وجوہات کی بنیاد پر ختم کیں جبکہ مسافروں کو بہترین سہولتوں کی فراہمی جاری رکھیں گے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...