مسلم لیگ (ن) کے آزاد سینیٹرز کی پارٹی میں شمولیت کی درخواست مسترد

مسلم لیگ (ن) کے آزاد سینیٹرز کی پارٹی میں شمولیت کی درخواست مسترد

اسلام آباد ( آئی این پی )الیکشن کمیشن نے ن لیگ کے حمایت یافتہ آزاد سینیٹرز کی (ن) لیگ میں شمولیت کی درخواست واپس کر دی، ترجمان الیکشن کمیشن نے کہا ہے الیکشن ایکٹ میں سینیٹ کے حوالے سے آزادامیدواروں کے بارے میں ایسا کوئی قانون نہیں کہ وہ جوائن کر سکتے ہیں یا نہیں، سینیٹ کے قانون میں ہے کہ چیئرمین سے کہہ کر آزاد امیدوار کوئی بھی پارٹی جوائن کر سکتے ہیں،ہم نے درخواست مسترد نہیں کی بلکہ ان کو بتایا ہے سینیٹ کے قانون کے تحت آتا ہے آپ وہاں جوائن کر سکتے ہیں۔تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن نے ن لیگ کے حمایت یافتہ آزاد سینیٹرز کی (ن) لیگ میں شمولیت کی درخواست واپس کر دی، ترجمان الیکشن کمیشن ہارون شنواری نے کہا ہے سینیٹ کے قانون میں ہے کہ چیئرمین سے کہہ کر آزاد امیدوار کوئی بھی پارٹی جوائن کر سکتے ہیں ، ہم نے درخواست مسترد نہیں کی بلکہ ان کو بتایا ہے سینیٹ کے قانون کے تحت آتا ہے آپ وہاں جوائن کر سکتے ہیں الیکشن کمیشن کے الیکشن ایکٹ میں سینیٹ کے حوالے سے آزادامیدواروں کے بارے میں ایسا کوئی قانون نہیں کہ وہ جوائن کر سکتے ہیں اتنے دنوں میں یا نہیں ۔جس کے بعد سینٹ سیکرٹریٹ نے بھی مسلم لیگ (ن) کے ان ارکان کو پارٹی میں شمولیت کی اجازت دینے سے انکار کر دیا۔ نجی ٹی وی کے مطابق ،آزاد حیثیت میں منتخب ہو نیو الے یہ سینیٹرز مسلم لیگ (ن) میں شامل ہونا چاہتے تھے ، اب ایوان میں آزاد ارکان کی تعداد 33 ہو گئی ہے۔ 20 ارکان کیساتھ پیپلز پا ر ٹی سینٹ کی سب سے بڑی ، 17 سینیٹرز کیساتھ مسلم لیگ (ن) دوسری اور 12 ارکان کیساتھ پی ٹی آئی تیسری بڑی جماعت بن گئی ہے۔

درخواست مسترد

مزید : صفحہ اول


loading...