چینی صدر سے شمالی کوریا کے سربراہ کی ملاقات ، جوہری ہتھیار وں کے خاتمے کے عزم کا اعادہ

چینی صدر سے شمالی کوریا کے سربراہ کی ملاقات ، جوہری ہتھیار وں کے خاتمے کے عزم ...

بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک) شمالی کوریا کے سربراہ کم جونگ ان اور چینی صدرّ شی چن پنگ کے درمیان ملاقات ہوئی جس کے دوران اہم امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ سرپرائز دورے پر 3 روز کیلئے آنیوالے شمالی کوریا کے سربراہ کی بیجنگ سے روانگی کے بعد چینی خبر ایجنسی نے دورے کی خبر جاری کی جبکہ شمالی کوریا نے بھی سپریم لیڈر کی دورہ چین کی تصدیق کی۔چینی صدر شی چن پنگ اور شمالی کوریا کے سربراہ کم جانگ ان کے درمیان ون آن ون اور وفود کی سطح پر ملاقاتیں ہوئی جس میں کئی اہم امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ یاد رہے 2011 میں اقتدار سنبھالنے کے بعد شمالی کوریا کے لیڈر کا یہ پہلا غیر ملکی دورہ تھا جس کے دوران ان کی اہلیہ اور دیگر حکام ہمراہ تھے۔چینی خبر ایجنسی کے مطابق کم جانگ ان نے امریکہ کیساتھ سربراہ ملاقات کی خواہش کا اظہار کیا جبکہ انہوں نے جوہری ہتھیاروں کے خاتمے کیلئے عزم کا اظہار بھی کیا۔کم جانگ ان کا کہنا تھا جزیرہ نما کوریا سے جوہری ہتھیاروں کے خاتمے کا مسئلہ حل ہوسکتا ہے، جنوبی کوریا اور امریکہ ہماری کوششوں کا خیرسگالی کیساتھ جوا ب دیں۔شمالی کوریا کے سربراہ نے کہا خطے میں امن و استحکام کا ماحول پیدا کیا جائے جبکہ چینی صدر سے بھی ملاقات کے دوران دونوں مما لک کے درمیان تعلقات بہتر کرنے پر تبادلہ خیال کیا گیا۔کم جانگ ان نے کہا اخلاقی ذمہ داری محسوس کی کہ کوریائی صورتحال سے صدر شی کو خود آگاہ کروں، سال نو کے آغاز سے کوریا کی صورتحال بہتر ہوئی ہے۔ خطے سے جوہری ہتھیار ختم کرنے کے عزم پر قائم ہیں اور یہ مسئلہ حل کیا جاسکتا ہے۔چینی صدر شی جن پنگ کا اس موقع پر کہنا تھا بیجنگ پیونگ یانگ تعلقات دونوں ممالک کیلئے بیش قیمت دولت ہیں ۔ د و سر ی جانب شمالی کورین میڈیا کے مطابق دونوں سربراہان مملکت کے درمیان ملاقات کے دوران جزیرہ نما کوریا کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا جبکہ کم جانگ ان نے چینی صدر کو دورے کی دعوت دی جو انہوں نے قبول کرلی۔کم جانگ ان وفد کے ہمراہ 25 مارچ کو سرپرائز دور ے پر بذریعہ ٹرین بیجنگ پہنچے جبکہ ٹرین کے حوالے سے میڈیا میں خبریں زیرگردش تھیں کہ یہ اْسی طرح کی ٹرین تھی جس میں ان کے آنجہانی والد کم جانگ 2 نے 2011 میں چین کا دورہ کیا تھا۔چینی وزارت خارجہ نے کم جانگ ان کے دورہ چین سے متعلق لاعلمی کا اظہار کیا تھا اور گزشتہ روز میڈیا بریفنگ کے دوران ایک سوال پر ان کا کہنا تھا انہیں کم جان انگ کے دورہ چین کے حوالے سے کوئی علم نہیں، اگر اس طرح کی کوئی اطلاعات آئیں تو میڈیا پر لایا جائے گا۔کم جان انگ کے دورہ چین سے متعلق خبروں کو امریکہ ، برطانیہ اور مغربی میڈیا میں بھی خصو صی کوریج دی گئی اور اس دورے کو خفیہ دورہ قرار دیا گیا۔وائٹ ہاؤس کا کہنا ہے شمالی کوریا پر زیادہ سے زیادہ دباؤ کی مہم کی وجہ سے مذاکرات کا ماحول پیدا ہورہا ہے۔

چین ،شمالی کوریا

مزید : علاقائی


loading...