سعودی عرب کے امن کو نشانہ بنانیوالی ہر کوشش پسپا کردینگے : شاہ سلمان

سعودی عرب کے امن کو نشانہ بنانیوالی ہر کوشش پسپا کردینگے : شاہ سلمان

ریاض(این این آئی)خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود نے باور کرایا ہے کہ سعودی عرب کے امن و استحکام کو نشانہ بنانے کی کسی بھی کوشش کو پورے عزم کے ساتھ ناکام بنا دیا جائے گا۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق شاہ سلمان نے اس موقف کا اظہار کابینہ کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس دارالحکومت ریاض کے قصرِ یمامہ میں منعقد ہوا۔ اس موقع پر خادم حرمین نے برادر اور دوست ممالک کی قیادت کا شکریہ ادا کیا جنہوں نے ایران نواز حوثی ملیشیا کی طرف سے مملکت پر بیلسٹک میزائل داغے جانے کی بھرپور مذمت کی۔شاہ سلمان کے مطابق دشمن کی جانب سے ایسی ہر کوشش پر روک لگائی جائے گی جس میں مملکت کے امن و استحکام ، اس کے شہریوں اور غیر ملکی مقیمین کو نشانہ بنایا گیا ہو۔ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے دو روز قبل یمن کے حوثی باغیوں کی جانب سے سعودی عرب پر سات میزائل حملوں کو یمنی باغیوں کی شکست کی علامت قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس کارروائی سے ثابت ہوگیا ہے کہ حوثی کم زور اور شکست خوردہ ہوچکے ہیں۔امریکی اخبارسے بات کرتے ہوئے شہزادہ محمد بن سلمان نے کہا کہ سعودی عرب یمن کے بحران کو سیاسی عمل کے ذریعے حل کرنا چاہتا ہے۔ایک سوال کے جواب میں شہزادہ محمد نے اپنے اس موقف کا اعادہ کیا کہ انتہا پسند جماعتوں اور دہشت گردوں کی طرف سے اسلام کو اغواء کرلیا گیا ہے۔ایران کے جوہری پروگرام کے حوالے سے پوچھے گئے سوال کے جواب میں سعودی ولی عہد نے کہا کہ تہران کے ساتھ طے پائے جوہری سمجھوتے نے ایران کو جوہری ہتھیاروں کے حصول سے روکا نہیں۔ اس معاہدے سے ایران جوہری بم تیار کرنے میں تاخیر کرے گا مگر یہ معاہدہ اسے ایٹمی ہتھیاروں سے روک نہیں سکتا۔

شاہ سلمان

مزید : علاقائی


loading...