عاصمہ رانی قتل کے ملزموں کا کیس پشاورمنتقل کرنے پر جواب طلب

عاصمہ رانی قتل کے ملزموں کا کیس پشاورمنتقل کرنے پر جواب طلب

پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ کے چیف جسٹس یحیی آفریدی نے کوہاٹ میں میڈیکل کالج کی طالبہ عاصمہ رانی کے قتل میں ملوث ملزموں کی درخواست ضمانت اورمقدمات سماعت کے لئے پشاورمنتقل کرنے کے لئے دائررٹ پرملزموں اورحکومت کونوٹس جاری کرکے جواب مانگ لیاہے عدالت عالیہ کے فاضل بنچ نے یہ احکامات گذشتہ روز محمد عرفان کی جانب سے فاروق ملک ایڈوکیٹ کی وساطت سے دائررٹ پرجاری کئے اس موقع پر عدالت کو بتایاگیاکہ درخواست گذار کی بہن عاصمہ رانی جو کوہاٹ میں میڈیکل کی طالبہ تھی کو قتل کردیاگیااورمقتولہ نے بیان نزع میں مجاہد آفریدی پردعویداری کی تھی اورپولیس نے ملزمان مجاہد آفریدی اورشاہ زیب کے خلاف مقدمہ درج کرکے انہیں گرفتارکرلیاگیاہے جن کے خلاف مقدمے میں اب دہشت گردی کی دفعات بھی شامل کردی گئی ہیں اورملزموں نے ضمانت پررہائی کے لئے کوہاٹ کی خصوصی عدالت میں درخواست ضمانت دائرکی ہیں تاہم بااثرملزمان انہیں ہراساں کرنے کی کوشش کررہے ہیں اورقبل ازیں بھی عدالت عالیہ درخواست ضمانت پشاورمنتقل کرنے کے احکامات جاری کرچکی تھی لہذادرخواست ضمانت اورمقدمہ سماعت کے لئے پشاورمنتقل کیاجائے تاکہ میرٹ اورانصاف کے مطابق فیصلہ ہوسکے عدالت عالیہ کے فاضل بنچ نے ملزمان شاہ زیب ٗ مجاہدآفریدی اورسرکار کو دو اپریل کے لئے نوٹس جاری کرکے جواب مانگ لیاہے

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...