چارسدہ ،مال بردار گاڑیوں کیلئے نو گو ایریا بن گیا

چارسدہ ،مال بردار گاڑیوں کیلئے نو گو ایریا بن گیا

چارسدہ (بیو رو رپورٹ) دوسرے شہروں سے آنے والی مال بردار اور بھاری گاڑیوں کیلئے چارسدہ نو گو ایریا بن گیا۔ مختلف چوکوں چوراہوں اور شاہرات پر ٹریفک اہلکار ٹریفک کے بے قابو ہجوم کو ختم کرانے ، شاہرات کو ٹریفک کیلئے کھلوانے اور شہریوں کو بہترین سفری سہولیات مہیا کرنے کی بجائے عوام اور ٹرانسپورٹرز کو لوٹنے لگے ۔ٹریفک کے شیر دل جوان رواں دواں گاڑیوں کو چوکوں ،چوراہوں اور مین شاہرات پر سڑک کے بیچوں بیچ روک کر چالانوں پے چالانے بھرواکر عوام کیلئے از خود مسائل پیدا کرنے لگے ہیں ۔ملک کے دیگر شہروں سے چارسدہ کو مال اور اجناس لانے والے مال بردار گاڑیوں کے مالکان ضلع چارسدہ میں ٹریفک اہلکار وں کے روئیوں اور بلا وجہ بھاری جرمانوں کی وجہ سے چارسدہ مال لانے سے کتراتے ہیں جس کی وجہ سے چارسدہ کے تجارتی اور کاروباری افراد کافی مشکلات کے شکار ہیں ۔دوسری شہروں اور علاقہ جات سے براستہ چارسدہ سفر کرنے والے بہ امر مجبوری اپنی سفر کیلئے دوسری شہروں کے شاہرات استعمال کرکے اپنی قیمتی اوقات کو خراب کررہے ہیں جس کی وجہ سے چارسدہ کے کاروباری حلقوں کے روزگار پر کاری ضرب لگ چکا ہے ۔چارسدہ میں خرید وفرخت اور کاروباری گراف روز بروز گرتا جا ر ہاہے ۔روزانہ مختلف شاہرات اور چوکوں میں ٹریفک اہلکاروں اور ٹرانسپورٹرز کے درمیان تو ں توں میں میں اور مشت و گریبانی سے اگر ایک طرف قانون کا مذاق اڑانے کیلئے ایک سازش کے تحت راہ ہموار کی جا رہی ہے تو دوسری طرف چارسدہ میں ٹریفک اصولوں کے مبینہ خلاف ورزیوں کے تحت جرمانوں کے مد میں لاکھوں روپے کے حساب کتاب بھی ایک گورک دھندہ شمار کیا جاتا ہے ۔ چارسدہ کے کاروباری اور عوامی حلقوں کے ساتھ دوسری علاقہ جات سے بہ راستہ چارسدہ مختلف علاقہ جات سفر کرنے والے ٹرانسپورٹرز اور عام عوام نے آئی جی خیبر پختونخوا سے مطالبہ کیا ہے کہ چارسدہ ٹریفک پولیس کی من مانیوں اور خود ساختہ قوانین کی نوٹس لی جائے اور روزانہ کے حساب سے چارسدہ ٹریفک اہلکاروں کی روئیے سے لاکھوں متاثرین کی آواز کو نقارہ خدا سمجھے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...