این ایف سی کے 3افسران کی درخواست ضمانت مسترد

این ایف سی کے 3افسران کی درخواست ضمانت مسترد

کراچی (اسٹاف رپورٹر)سندھ ہائیکورٹ نے یوریا کھاد کی فروخت میں جعل سازی کے زریعے قومی خزانے کو کروڑوں روپے نقصان پہنچانے کے مقدمے میں نامزد این ایف سی کے 3 سرکاری افسران سمیت 4 ملزمان کی درخواست ضمانت مسترد کرتے ہوئے جیل روانہ کردیا ہے ۔بدھ کو سندھ ہائیکورٹ میں یوریا کھاد کی فروخت میں جعل سازی کے زریعے قومی خزانے کو کروڑوں روپے نقصان پہنچانے کے مقدمے میں نامزداین ایف سی کے ملازم عزیز ابوبکر، گل شیر چاچڑ، امجد اقبال اور شوکت کی جانب سے دائر درخواست ضمانت پر سماعت ہوئی۔عدالت کو نیب پراسیکیوٹر نے آگاہ کیا کہ ملزمان نے نیشنل فرٹیلائزر کارپوریشن لمیٹڈ میں 14 کروڑ سے زائد کی کرپشن کی ،اس مقصد کے لئے سرکاری افسران نے 2 کمپنیوں کو خلاف ضابطہ ٹھیکے بھی دیئے۔نیب پراسیکیوٹر کا ملزمان کی درخواست ضمانت کی مخالفت کرتیہوئے مزید کہنا تھا کہ ملزمان کھاد کی بوریاں غائب کرکے بلیک میں فروخت کرتے تھے اور یہ ملزمان نے نیشنل فرٹیلائزر کارپوریشن لمیٹڈ کے ملازمین اور ٹھیکے داروں کی ملی بھگت سے کیا۔عدالت نے نیب پراسیکیوٹر کا موقف سننے کے بعد این ایف سی کے 3 سرکاری افسران سمیت 4 ملزمان کی درخواست ضمانت مسترد کرتے انہیں جیل روانہ کردیا

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...