ٹبہ سلطان پور ہسپتال عملہ کی غفلت، نوجوان جان کی بازی ہار گیا

ٹبہ سلطان پور ہسپتال عملہ کی غفلت، نوجوان جان کی بازی ہار گیا

ٹبہ سلطان پور(نمائندہ پاکستان) ہسپتال ٹبہ سلطان پور کے عملہ کی لاپرواہی بروقت طبی امداد نہ ملنے پر نوجوان جابحق ہو گیا پیر محمد نیاز کواچانک طبیعت خراب ہو نے پر سرکاری ہسپتال(بقیہ نمبر36صفحہ12پر )

ٹبہ سلطان پور لایا گیا لیکن ڈاکٹروں کی عدم توجہی اور بروقت ایمبولنیس کی نہ ہونے پر دم توڑ گیا تفصیل کے مطا بق ٹبہ سلطان پور کے نواحی علاقہ دین واہ کی بستی مسجد والی کے رہائشی پیر محمد نیاز کی آچانک طبیعت خراب ہوئی جس کو فوری طور پر ایک پرائیویٹ ہسپتال لایا گیالیکن ڈاکٹر نہ ہو نے پر محمد نیاز کو سرکاری ہسپتال ٹبہ سلطان پور منتقل کیا گیا لیکن سرکاری ہسپتال میں بھی ڈاکٹر موجود نہ تھے جس کے باعث محمد نیاز بروقت طبعی امداد نہ ملنے پر دم توڑ گیاہسپتال ٹبہ سلطان پور کی لیڈی ڈاکٹر شازیہ اقبال کی بے حسی اتنی کہ محمد نیاز دم توڑ گیا اُن کی طرف دیکھا تک نہیں اور قریب سے گزر گئیں علاقہ کی مختلف تنظیموں کے افراد نے شدید احتجاج کرتے ہوئے ہسپتال ٹبہ سلطان پور کی انچارج لیڈی ڈاکٹر شازیہ اقبال کے خلاف سخت کاروائی کرتے ہوئے عرصہ دراز سے تعینات کو فوری تبدیل کرنے کامطا لبہ کیا ہے جب اس سلسلہ میں ہسپتال انتظامیہ سے موقف لینے کے لئے رابطہ کیا تو انہوں نے کہا کہ محمد نیاز کو دل کی تکلیف تھی اور حرکت قلب بند ہونے کے باعث محمد نیاز نے دم توڑا ہے ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...