نشتر ہسپتال ‘ رولز کے برعکس مریض داخل کرنیکی روایت ختم نہ ہوسکی

نشتر ہسپتال ‘ رولز کے برعکس مریض داخل کرنیکی روایت ختم نہ ہوسکی

ملتان(وقائع نگار)نشتر ہسپتال کے شعبہ نیورو سرجری سمیت دیگر وارڈز میں صحت رولز کے برعکس مریض داخل کرنے کی روایت تاحال ختم نہ ہوسکی،ایک بستر پر 2 سے3مریض (بقیہ نمبر38صفحہ12پر )

داخل ہورہے ہیں بلکہ کئی مریضوں کو بستر دستیاب نہ ہونے پر وارڈز کے برآمدوں کے فرش پر بستر لگاکر داخل کیاجارہا ہے،اس بارے میں ذرائع کا کہنا ہے کہ صوبہ کے ہسپتالوں میں ایک وارڈ کے اندر مریض کیلئے صرف 40بستر مختص کئے گئے تھے مگر حالات اس کے بالکل برعکس ہوتے جارہے ہیں،جنوبی پنجاب کے سب سے بڑے نشتر ہسپتال میں مریضوں کے ساتھ بھیڑ بکریوں جیسا سلوک کیا جارہا ہے اور مریض علاج معالجہ کی سہولت حاصل کرنے کیلئے مجبوراً داخل ہورہے ہیں،ذرائع کا کہنا ہے کہ ویسے تو نشتر ہسپتال کے تقریباً تمام وارڈز میں مریض کی تعداد دن بدن بڑھ رہی ہے لیکن شعبہ نیورو سرجری کے وارڈ میں باقی وارڈز سے پیچھے نہیں ہے اور وہاں بھی روزانہ 120 سے زائد مریض داخل ہونے کیلئے آتے ہیں،اس وقت بھی 80سے زائد مریض منظور شدہ 40 بستروں پر داخل ہیں ذرائع کا مزید کہنا ہے کہ ڈاکٹروں،نرسوں،پیرامیڈیکل سٹاف کی تعداد منظور شدہ بستروں کے مطابق ہے جو آج بڑھ نہ سکی،ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ 1104 سے 1704 تک بستروں کی تعداد کا غذوں کی حد تک پچھلے کئی سالوں سے بڑھ چکی ہے مگر عملی طور پر نتیجہ صفر آرہا ہے،طبی سہولیات سمیت مفت ادویات کی فراہمی بھی منظور شدہ بستروں کی تعداد کے مطابق دی جارہی ہے چند روز قبل نشتر ہسپتال کے شعبہ ایمرجنسی کے تھرڈ فلور پر 40 بستروں پر مشتمل ایک نیورو وارڈ کے قیام کا افتتاح محکمہ سپشلائزڈ ہیلتھ کیئر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن پنجاب نجم احمد شاہ نے کیا اور جیسے ہی سیکرٹری واپس آگئے،تو وہاں صرف تالہ لگادیا گیا جبکہ مریضوں کو بھی افتتاح کے بعد واپس نیورو سرجری وارڈ میں شفٹ کردیا گیا ذرائع کا کہنا ہے کہ نیوور سرجری وارڈز میں مریضوں کے رش کو مدنظر رکھتے ہوئے ایمرجنسی کے تھرڈ فلور پر نئے وارڈ میں 40بستروں پر مریضوں کو شفٹ کردیا جاتا تو نشتر نیورو سرجری کے وارڈ میں مریضوں کا رش میں کافی کمی واقع ہوسکتی تھی جبکہ نشتر انتظامیہ کے مطابق بہت جلد 1704 بستروں کی منظوری کے بعد بجٹ مل جائے گا اور تمام درپیش مریضوں کو مسائل کو حل کرنے کے اقدامات کئے جائیں گے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...