”اگر وزیر اعظم چاہیں تو چیف جسٹس سے یہ چیزمانگ سکتے ہیں ۔۔۔“احتساب عدالت کے باہر نواز شریف نے صحافیوں سے ایسی بات کہہ دی کہ سب کا منہ کھلا کا کھلا رہ گیا

”اگر وزیر اعظم چاہیں تو چیف جسٹس سے یہ چیزمانگ سکتے ہیں ۔۔۔“احتساب عدالت کے ...
”اگر وزیر اعظم چاہیں تو چیف جسٹس سے یہ چیزمانگ سکتے ہیں ۔۔۔“احتساب عدالت کے باہر نواز شریف نے صحافیوں سے ایسی بات کہہ دی کہ سب کا منہ کھلا کا کھلا رہ گیا

  


اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )سابق وزیراعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ اگر وزیراعظم شاہد خاقان عباسی چاہیں تو چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار سے آج کے بیان پر وضاحت طلب کر سکتے ہیں ۔ان کا کہنا تھاسب اداروں کو آئینی حدود میں رہ کر کام کرنا چاہیے اور چیف جسٹس کو ایسی باتیں نہیں کرنی چاہئیں ۔

احتساب عدالت کے باہر میڈ یا سے نمائندوں سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وزیراعظم اور چیف جسٹس کی ملاقات کے بعد شاہد خاقان عباسی سے کوئی ملاقات نہیں ہوئی ہے ۔نوازشریف نے کہا کہ چیف جسٹس کو ایسی باتیں نہیں کرنی چاہئیں ،اگر وزیراعظم چاہیں تو چیف جسٹس سے وضاحت طلب کر سکتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ میں تو تب بھی خاموش رہا جب جسٹس عظمت نے میرے سامنے کہا کہ نواز شریف کو پتہ ہونا چاہیے کہ اڈیالہ جیل میں بہت جگہ موجود ہے ۔

واضح رہے کہ آج غیر قانونی تعمیرات کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس نے کہا تھا کہ کھویا کچھ نہیں ،پایا ہی ہے ،ہم یہاں معاملات میں مداخلت کیلئے نہیں بیٹھے۔ان کا کہنا تھا میرا کام فریادی کی فریاد سننا ہے،وہ فریاد سنانے آئے تھے مگر دیاکچھ نہیں ،چیف جسٹس نے کہا کہ میر ی ذمہ داری ہے کہ سائل کی تکلیف کوسنوں۔

مزید : Breaking News /اہم خبریں /قومی


loading...