” میں اپنی لڑکیوں کو کہتی ہوں کہ کسی کے ساتھ بھی ڈیٹ پر نہ جائیں کیونکہ اس طرح ۔۔۔ “ آسٹریلیا میں جاسوسوں اور ایلیٹ کلاس کی خواتین کو جنسی تربیت دینے والی خاتون نے بڑے راز سے پردہ اٹھادیا، سب کچھ کھل کر بتادیا

” میں اپنی لڑکیوں کو کہتی ہوں کہ کسی کے ساتھ بھی ڈیٹ پر نہ جائیں کیونکہ اس طرح ...
” میں اپنی لڑکیوں کو کہتی ہوں کہ کسی کے ساتھ بھی ڈیٹ پر نہ جائیں کیونکہ اس طرح ۔۔۔ “ آسٹریلیا میں جاسوسوں اور ایلیٹ کلاس کی خواتین کو جنسی تربیت دینے والی خاتون نے بڑے راز سے پردہ اٹھادیا، سب کچھ کھل کر بتادیا

  


سڈنی (ڈیلی پاکستان آن لائن)آسٹریلیا میں خفیہ ایجنسیوں کی خواتین ، ٹیچرز اور ایلیٹ کلاس کی ایسکرٹس کو ٹریننگ فراہم کرنے والی خاتون سمانتھا ایکس کا کہنا ہے کہ وہ اپنی زیر تربیت لڑکیوں کو ہمیشہ کہتی ہیں کہ وہ اپنے کسی گاہک کے ساتھ ڈیٹ پر نہ جائیں کیونکہ اس طرح ان کے کام کا حرج ہوگا، آمدنی متاثر ہوگی اور گھر بسنے کا امکان بھی کم ہی ہوگا۔

43 سالہ سمانتھا ایکس اپنی اسکرٹ ایجنسی چلاتی ہیں اور ان کا دعویٰ ہے کہ وہ ہائی کلاس کی ایسکرٹس کو ٹریننگ دیتی ہیں جن میں ٹیچرز اور جاسوس بھی شامل ہوتے ہیں۔ سمانتھا نے اپنی ویب سائٹ پر سوال و جواب کا ایک سلسلہ شروع کر رکھا ہے جس میں وہ اپنے شعبے سے متعلق پوچھے گئے چبھتے ہوئے سوالوں کے جواب دیتی ہیں۔

ایک صارف نے سمانتھا سے سوال کیا کہ کیا کبھی ایسکرٹس کو اپنے گاہکوں کے ساتھ پیار ہوجاتا ہے اور کیا آپ کو بھی کبھی پیار ہوا ہے۔ اس سوال کے جواب میں سمانتھا نے کہا کہ بعض اوقات ایسکرٹس کو اپنے گاہکوں سے پیار ہوجاتا ہے کیونکہ وہ بھی انسان ہیں روبوٹ نہیں لیکن یہ پیار اس طرز کا نہیں ہوتا جیسا کہ لوگ سوچتے ہیں۔ ’ ایسکرٹس کو بعض لوگوں کی عادت ہوجاتی ہے جیسا کہ کوئی پرانا گاہک ہو تو اس کے ساتھ ایک خاص تعلق بن جاتا ہے‘۔

سمانتھا نے بتایا کہ ایک بار ان کا ایک گاہک بھی ان کے پیار میں مبتلا ہوگیا تھا لیکن اس کا نتیجہ انتہائی بھیانک نکلا ، ’ میں ٹریننگ حاصل کرنے والی لڑکیوں کو ہمیشہ یہ نصیحت کرتی ہوں کہ کبھی بھی اپنے کسی گاہک کے ساتھ ڈیٹ پر نہ جاﺅ کیونکہ اس طرح ان کی آمدنی بھی متاثر ہوگی اور گھر بسنے کا امکان بھی نہ ہونے کے برابر ہوتا ہے جو کہ گھاٹے کا سودا ہے، کیونکہ جب میں بطور ایسکرٹ کام کرتی تھی تو میں نے اپنا کام اس وقت چھوڑ دیا تھا جب مجھے کسی سے پیار ہوا کیونکہ بطور ایسکرٹ کام کرتے ہوئے آپ کیلئے کسی کے ساتھ پیار نبھانا انتہائی مشکل ہوجاتا ہے‘۔

خیال رہے کہ لندن میں پیدا ہونے والی سمانتھا اب سڈنی میں مقیم ہیں ، پہلے وہ ایسکرٹ کے طور پر کام کرتی تھیں لیکن انہوں نے یہ کام چھوڑ کر صحافت کا پیشہ اختیار کرلیا اور اپنی زندگی کے حوالے سے کچھ کتابیں بھی لکھیں جو کثیر تعداد میں فروخت ہوئیں۔ ان دنوں سمانتھا ایک ایسکرٹ ایجنسی چلا رہی ہیں اور ان کا دعویٰ ہے کہ وہ ایلیٹ کلاس کی خواتین کو ایسکرٹ کی ٹریننگ دیتی ہیں ، اس کے علاوہ وہ ٹیچرز اور خفیہ ایجنسیوں کیلئے کام کرنے والی جاسوسوں کی بھی تربیت کرتی ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...