اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے 19 سالہ فلسطینی امدادی کارکن شہید تین زخمی ،حالت تشویشناک

اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے 19 سالہ فلسطینی امدادی کارکن شہید تین زخمی ،حالت ...

بیت لحم (این این آئی)فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے میں اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے 19 سالہ فلسطینی امدادی کارکن شہید اور تین زخمی ہوگئے۔ اطلاعات کے مطابق قابض فوج نے بیت لحم میں الدہیشہ کیمپ فلسطینی مظاہرین پر فائرنگ کی، فائرنگ کی زد میں آکر ایک فلسطینی امدادی کارکن شہید اور تین زخمی ہوگئے۔ الدھشیہ پناہ گزین کیمپ میں مظاہرے کے دوران 19 سالہ فلسطینی ساجد مزھر شہید اور تین زخمی ہوگئے۔عینی شاہدین نے بتایا کہ صہیونی فوج نے فلسطینی مظاہرین پر گولیاں چلائیں اور ان پر ربڑ کے خول میں پٹی دھاتی گولیوں کا استعمال کیا۔

مقامی ذرائع کے مطابق صہیونی فوج کی فائرنگ سے زخمی ہونیوالے تین فلسطینیوں کی حالت تشویشناک ہے اور انہیں ہسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔اسرائیلی فوج نے بیت لحم میں فلسطینی شہری جہاد معالی کے گھر پر چھاپہ مارا تاہم گھر پرنہ ہونے کی بناء پر انہیں حراست میں نہیں لیا جاسکا۔

اسرائیلی فوج نے اس کے بھائی عیسیٰ معالی کو حراست میں لے لیا۔ادھر فلسطینی میڈیکل ریلیف آرگنائزیشن کے چیئرمین مصطفی البرغوثی نے بتایا کہ صہیونی فوج نے امدادی کارکن ساجد مزھر کو گولیاں مار کر شدید زخمی کردیا۔ اسے ہسپتال منتقل کیا گیا ہاں وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گیا۔

مزید : علاقائی