پاکستان سٹاک ماکیٹ ، سرمایہ کار تذبذ کا شکار، انڈیکس 4نفسسیاتی حدیں گر گیا

پاکستان سٹاک ماکیٹ ، سرمایہ کار تذبذ کا شکار، انڈیکس 4نفسسیاتی حدیں گر گیا

کراچی (اکنامک رپورٹر)پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں دوروزہ تیزی کے بعدکاروباری ہفتے کے چوتھے روز جمعرات کوزبردست مندی رہی اور کے ایس ای100انڈیکس کی38900،38800،38700 اور 38600کی نفسیاتی حدوں سے گرگیا،مندی کے نتیجے میں سرمایہ کاروں کے 67ارب26کروڑروپے سے زائدڈوب گئے ،کاروباری حجم گذشتہ روز کی نسبت42.20فیصدکم جبکہ73.19فیصد حصص کی قیمتوں میں کمی ریکارڈ کی گئی۔جمعرات کو مارکیٹ میں کاروبار کا آغازملے جلے رجحان سے ہواتاہم حکومت کی جانب سے گیس،بجلی کی قیمتوں میں اضافے کے عندیے کے باعث مقامی سرمایہ گروپ تذبذب کا شکار نظرآئے اور نئی سرمایہ کاری سے گریز کیاجس کے نتیجے میں ٹریڈنگ کے دوران ایک موقع پر کے ایس 100 انڈیکس38417پوائنٹس کی نچلی سطح پر آگیاتاہم غیرملکی سرمایہ جکاروں کی جانب سے فوڈز،بینکنگ ، ٹیلی کام اور دیگرسیکٹر میں خریداری کی گئی ، جس کے نتیجے میں مارکیٹ میں ریکوری آئی اور کے ایس ای100انڈیکس کی 38500کی نفسیاتی حد بحال ہوگئی تاہم اتارچڑھاؤ کا سلسلہ سارا دن جاری رہا، مارکیٹ کے اختتام پر کے ایس ای 100 انڈیکس 412.06پوائنٹس کمی سے 38552.95پوائنٹس پر بندہوا۔مجموعی طور پر 332کمپنیوں کے حصص کا کاروبار ہوا،جن میں سے75کمپنیوں کے حصص کے بھاؤمیں اضافہ،243کمپنیوں کے حصص کے بھاؤ میں کمی جبکہ14کمپنیوں کے حصص کے بھاؤ میں استحکام رہا۔سرمایہ کاری مالیت میں67ارب26کروڑ77 لاکھ 18ہزار 845روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی، جس کے نتیجے میں سرمایہ کاری کی مجموعی مالیت گھٹ کر78کھرب37ارب89کروڑ13لاکھ 22ہزار889 روپے ہوگئی۔ جمعرات کومجموعی طور پر13کروڑ21لاکھ50ہزار 700 شیئرزکاکاروبارہوا،جوبدھ کی نسبت9کروڑ65لاکھ 19 ہزار 500شیئرزکم ہیں۔قیمتوں کے اتار چڑھاؤ کے حساب سے رفحان میظ کے حصص سرفہرست رہے ،جس کے حصص کی قیمت335.00روپے اضافے سے7045.00روپے اورنیسلے پاکستان کے حصص کی قیمت32.53روپے اضافے سے7032.01روپے پر بند ہوئی۔نمایاں کمی یونی لیورفوڈزکے حصص میں ریکارڈکی گئی،جس کے حصص کی قیمت99.00روپے کمی سے7400.00روپے اورباٹاپاک کے حصص کی قیمت47.82روپے کمی سے1652.08روپے ہوگئی۔

۔جمعرات کویونٹی فوڈز کی سرگرمیاں4کروڑ31لاکھ77ہزارشیئرز کے ساتھ سرفہرست رہیں،جس کے شیئرز کی قیمت51پیسے کمی سے2.37روپے اوربینک آف پنجاب کی سرگرمیاں71لاکھ41ہزار500شیئرز کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہی،جس کے شیئرز کی قیمت20پیسے کمی سے12.90روپے ہوگئی ۔جمعرات کوکے ایس ای30انڈیکس239.47پوائنٹس کمی سے18213.36پوائنٹس،کے ایم آئی30انڈیکس1069.40پوائنٹس کمی سے63012.15پوائنٹس جبکہ کے ایس ای آل شیئر انڈیکس241.54پوائنٹس کمی سے28167.20پوائنٹس پر بند ہوا ۔

پاکستان سٹاک ماکیٹ ، سرمایہ کار تذبذ کا شکار، انڈیکس 4نسسیاتی حدیں گر گیا

کراچی (اکنامک رپورٹر)پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں دوروزہ تیزی کے بعدکاروباری ہفتے کے چوتھے روز جمعرات کوزبردست مندی رہی اور کے ایس ای100انڈیکس کی38900،38800،38700 اور 38600کی نفسیاتی حدوں سے گرگیا،مندی کے نتیجے میں سرمایہ کاروں کے 67ارب26کروڑروپے سے زائدڈوب گئے ،کاروباری حجم گذشتہ روز کی نسبت42.20فیصدکم جبکہ73.19فیصد حصص کی قیمتوں میں کمی ریکارڈ کی گئی۔جمعرات کو مارکیٹ میں کاروبار کا آغازملے جلے رجحان سے ہواتاہم حکومت کی جانب سے گیس،بجلی کی قیمتوں میں اضافے کے عندیے کے باعث مقامی سرمایہ گروپ تذبذب کا شکار نظرآئے اور نئی سرمایہ کاری سے گریز کیاجس کے نتیجے میں ٹریڈنگ کے دوران ایک موقع پر کے ایس 100 انڈیکس38417پوائنٹس کی نچلی سطح پر آگیاتاہم غیرملکی سرمایہ جکاروں کی جانب سے فوڈز،بینکنگ ، ٹیلی کام اور دیگرسیکٹر میں خریداری کی گئی ، جس کے نتیجے میں مارکیٹ میں ریکوری آئی اور کے ایس ای100انڈیکس کی 38500کی نفسیاتی حد بحال ہوگئی تاہم اتارچڑھاؤ کا سلسلہ سارا دن جاری رہا، مارکیٹ کے اختتام پر کے ایس ای 100 انڈیکس 412.06پوائنٹس کمی سے 38552.95پوائنٹس پر بندہوا۔مجموعی طور پر 332کمپنیوں کے حصص کا کاروبار ہوا،جن میں سے75کمپنیوں کے حصص کے بھاؤمیں اضافہ،243کمپنیوں کے حصص کے بھاؤ میں کمی جبکہ14کمپنیوں کے حصص کے بھاؤ میں استحکام رہا۔سرمایہ کاری مالیت میں67ارب26کروڑ77 لاکھ 18ہزار 845روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی، جس کے نتیجے میں سرمایہ کاری کی مجموعی مالیت گھٹ کر78کھرب37ارب89کروڑ13لاکھ 22ہزار889 روپے ہوگئی۔ جمعرات کومجموعی طور پر13کروڑ21لاکھ50ہزار 700 شیئرزکاکاروبارہوا،جوبدھ کی نسبت9کروڑ65لاکھ 19 ہزار 500شیئرزکم ہیں۔قیمتوں کے اتار چڑھاؤ کے حساب سے رفحان میظ کے حصص سرفہرست رہے ،جس کے حصص کی قیمت335.00روپے اضافے سے7045.00روپے اورنیسلے پاکستان کے حصص کی قیمت32.53روپے اضافے سے7032.01روپے پر بند ہوئی۔نمایاں کمی یونی لیورفوڈزکے حصص میں ریکارڈکی گئی،جس کے حصص کی قیمت99.00روپے کمی سے7400.00روپے اورباٹاپاک کے حصص کی قیمت47.82روپے کمی سے1652.08روپے ہوگئی۔

۔جمعرات کویونٹی فوڈز کی سرگرمیاں4کروڑ31لاکھ77ہزارشیئرز کے ساتھ سرفہرست رہیں،جس کے شیئرز کی قیمت51پیسے کمی سے2.37روپے اوربینک آف پنجاب کی سرگرمیاں71لاکھ41ہزار500شیئرز کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہی،جس کے شیئرز کی قیمت20پیسے کمی سے12.90روپے ہوگئی ۔جمعرات کوکے ایس ای30انڈیکس239.47پوائنٹس کمی سے18213.36پوائنٹس،کے ایم آئی30انڈیکس1069.40پوائنٹس کمی سے63012.15پوائنٹس جبکہ کے ایس ای آل شیئر انڈیکس241.54پوائنٹس کمی سے28167.20پوائنٹس پر بند ہوا ۔

مزید : کامرس