ہاؤسنگ کالونیاں ‘ فراڈ میں ملوث اسٹیٹ ڈویلپرکے بے نامی اثاثے بے نقاب

ہاؤسنگ کالونیاں ‘ فراڈ میں ملوث اسٹیٹ ڈویلپرکے بے نامی اثاثے بے نقاب

ملتان (وقائع نگار)نیب ملتان بیورو نے ہاؤسنگ سکیمیوں کے فراڈ میں ملوث خان اسٹیٹ ڈویلپر کے بے نامی اثاثوں کا سراغ لگایا لیا ہے۔گلشن رحمان گلشن توحید اور گلشن وحید میں الاٹیز سے پونے دو ارب روپے سے زائد کا فراڈ کرنے والے خان اسٹیٹ ڈویلپر کی ملتان اور راجن پور میں بے نامی جائیدادوں کا سراغِ لگا کر منتقلی پر پابندی لگا دی۔نیب ترجمان کے مطابق خان اسٹیٹ ڈویلپر کی جانب سے(بقیہ نمبر27صفحہ12پر )

دو کمپنیاں خان اور کا شانہ اسٹیٹ ڈویلپر بنا کر ہاؤسنگ کالونیوں کا کاروبار شروع کیا ان کمپنیوں کے ذریعہ ملزمان نے گلشن رحمان،گلشن توحید اور گلشن وحید بنائیں جس کے بعد الا ٹیز کو ان ہاؤسنگ کالونیوں میں پلاٹ فروخت کر دیئے ملزمان سے گلشن رحمان میں الا ٹیز سے نو کروڑ پچاسی لاکھ ستر ہزار دو سو تین گلشن توحید میں انچاس کروڑ تیرہ لاکھ تیرہ ہزار سات سو بارہ روپے گلشن وحید میں چھتیس کروڑ چون لاکھ چالیس ہزار چار سو تریسٹھ روپے وصول کئے جس پر نیب ملتان بیرو نے تین ملزمان طیب بلال خان امتیاز حسین اور محمد عبداللہ کو حراست میں لے لیا جو کہ اس وقت جوڈیشل ریمانڈ پر ہیں۔نیب نے انوسٹی گیشن کے دوران خان اسٹیٹ ڈویلپر کی راجن پور اور ملتان میں بے نامی جائیدادیں بھی تلاش کر لیں ہیں جس کے بعد راجن پور اور ملتان کے ڈپٹی کمشنرز کو ریسیور مقرر کرکے جائیدادوں کے ٹرانسفر پر پابندی عائد کر دی ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر