سرکاری ادارے حاکم نہیں عوام کے خادم بنیں‘ لیاقت بلوچ

سرکاری ادارے حاکم نہیں عوام کے خادم بنیں‘ لیاقت بلوچ

ملتان (سٹی رپورٹر)قائم مقام امیر جماعت اسلامی پاکستان لیاقت بلوچ نے کہاہے کہ انتخابات قیادت و نظام کی تبدیلی اور عوام (بقیہ نمبر19صفحہ12پر )

کے فلاحی پروگرام کے لیے پائیدار راستہ ہیں ۔ انتخابات شفاف اور غیر جانبدارانہ ہوں ، ریاست اور سیاست آئینی ضابطوں کی پابند ہو۔ ریاست اگر سیاست کا حق اور بیانیہ چھین لے تو انارکی پیدا ہوتی ہے ۔ سول سروس سٹرکچر ہر اعتبار سے اصلاحات کا متقاضی ہے ۔ سرکاری ادارے حاکم نہیں عوام کے خادم بنیں ۔ انہوں نے کہاہے کہ اساتذہ کی تذلیل نہ کی جائے ، ان کے مطالبات تسلیم کیے جائیں ۔ تمام مطالبات حکومت معاہدہ کے تحت تسلیم کر چکی ہے لیکن عملدرآمد میں بدنیتی اختیار کی جارہی ہے ۔ جماعت اسلامی اساتذہ کی مکمل حمایت کرتی ہے ۔ لیاقت بلوچ نے کہاکہ ہندو بچیوں کا مسلمان ہونا ، گھر سے بھاگ کر یا بھگا کر شادی کا معاملہ سنجیدہ ایشو ہے ۔ زور ، زبردستی ، خواہشات نفس کے تحت مذہب کا استعمال درست طریقہ نہیں لیکن مسلم اور غیر مسلم گھرانوں میں روزانہ ایسے واقعات تنبیہ کر رہے ہیں کہ والدین ، سماج اور ریاست بیدار ہوں کہ بے راہ روی معاشرہ کا نظام تتر بتر کر رہی ہے ۔ تمام طبقات ہوش کریں ، کج بحثی چھوڑیں اور حالات سنبھالیں۔

لیاقت بلوچ

مزید : ملتان صفحہ آخر