لاک ڈاﺅن کی وجہ سے جرائم بھی خاطر خواہ کمی، مغوی بچے کوایک جگہ سے دوسری جگہ منتقلی کی کوشش میں ناکامی پر ملزمان سڑک کنارے چھوڑ کر فرار

لاک ڈاﺅن کی وجہ سے جرائم بھی خاطر خواہ کمی، مغوی بچے کوایک جگہ سے دوسری جگہ ...
لاک ڈاﺅن کی وجہ سے جرائم بھی خاطر خواہ کمی، مغوی بچے کوایک جگہ سے دوسری جگہ منتقلی کی کوشش میں ناکامی پر ملزمان سڑک کنارے چھوڑ کر فرار

  

لاڑکانہ (ویب ڈیسک) لاڑکانہ سے پانچ دن پہلے اغوا ہونے والا بچہ شکارپور پولیس نے بازیاب کرکے لاڑکانہ پولیس کے حوالے کردیا۔کرونا وائرس کے باعث پورے پاکستان میں لاک ڈائون ہے۔ شاہراہوں پر جگہ جگہ قانون نافذ کرنے والے اداروں نے چیک پوسٹ قائم کیے ہیں جس کے باعث جرائم کی شرح میں بھی خاطر خواہ کمی واقع ہوئی ہے۔

لاڑکانہ میں اغواکاروں نے 5 دن پہلے سات سالہ مصدق بھٹو کا اغوا کیا اور آج اسے شکارپور میں لکھدر گھنہ گھر کے قریب کار سے اتارا اور خود فرار ہوگئے۔بچہ روڈ پر کھڑا رو رہا تھا۔ اس دوران وہاں سے گزرنے والے پولیس اہلکاروں نے اسے اٹھاکر تھانے پہچایا جہاں بچے نے پولیس کو بتایا مجھے میرے بھائی کے سالوں نے موٹرسائیکل پر اٹھایا اور پانچ دن کہیں چھاپا کر رکھا تھا۔ آج گاڑی سے اتار کر خود چلے گئے۔

پولیس کے مطابق لاک ڈائون کی سیکورٹی سخت ہونے کی وجہ سے ملزمان بچے کو دوسری جگہ منتقل نہ کرسکے۔سات سالہ مصدق بھٹو لاڑکانہ کے سرور کالونی کا رہائشی ہے۔ والدین نے لاڑکانہ کے تھانہ علی گوہر میں رپورٹ درج کررکھی تھی۔ بچے کو متعلقہ تھانہ کے اہلکار آفتاب ابڑو کے حوالے کردیا گیا، جس کو کل لاڑکانہ سیشن کورٹ میں پیش کیا جائے گا۔ کیس کی مزید تفتیش لاڑکانہ پولیس کرے گی۔

مزید :

علاقائی -سندھ -لاڑکانہ -