” میں انہیں سمجھانے کی کوشش کرتا ہوں تو گندی گالیاں نکالنے لگ جاتے ہیں “ عامر لیاقت اپنی ہی جماعت تحریک انصاف پر برس پڑے

” میں انہیں سمجھانے کی کوشش کرتا ہوں تو گندی گالیاں نکالنے لگ جاتے ہیں “ ...
” میں انہیں سمجھانے کی کوشش کرتا ہوں تو گندی گالیاں نکالنے لگ جاتے ہیں “ عامر لیاقت اپنی ہی جماعت تحریک انصاف پر برس پڑے

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )حکومت پاکستان کی جانب سے لاک ڈاﺅن کے دوران دیہاڑی داروں کو راشن اور امداد فراہم کرنے کا اعلان کیا گیا تھا تاہم اب تک اس پر کراچی میں تو عملدرآمد نہیں ہو سکا ہے جس پر تحریک انصاف کے رکن اسمبلی عامر لیاقت کافی نالاں دکھائی دیتے ہیں اور کہتے ہیں جب میں کوئی سوشل میڈیا پر تجویز دیتا ہوں تو آگے سے گندی گندی گالیاں پڑتی ہیں ۔

تفصیلات کے مطابق عامر لیاقت کی ایک ویڈیو تیزی کے ساتھ وائر ل ہو رہی ہے جس میں وہ بیٹھے غریبوں کیلئے راشن کے بیگ بناتے دکھائی دیتے ہیں اور ساتھ ایک ساتھی کے ساتھ ٹیلیفون کے کیمرے پر تبصرہ بھی کر رہے ہیں ۔

کیمرہ مین نے عامر لیاقت سے سوال کیا کہ آپ وفاق میں ہیں ، حکومت کس وقت گرانٹ دے گی ، جب دیہاڑی دار طبقہ اپنے بچوں کی بھوک کی وجہ سے باہر نکل آئے گا ؟عامر لیاقت نے جواب دیتے ہوئے کہا کہ اس وقت اتنی خوفناک صورتحال ہے ، اب بھی گرانٹ کا اعلان نہیں ہوا اورفوری طور پر پیسے نہیں دیے گئے تو پتا نہیں آپ کیا دیکھ رہے ہیں لیکن میں تو افراتفری مچتی ہوئی دیکھ رہاہوں ، مجھے لگ رہاہے کہ لوگ گھروں میں بیٹھیں گے اور باہر نکل آئیں گے ۔

عامر لیاقت سے سوال کیا گیا کہ عمران خان آپ کی پارٹی کے ہیں ، آپ رکن اسمبلی ہیں ، تحریک انصاف کے رہنما نے سوال سنا اور جواب دیتے ہوئے جذباتی ہو گئے ، کہنے لگے کہ سر میں روز کہہ رہا ہوں لیکن مجھے سوشل میڈیا پر گالیاں پڑنی شروع ہو جاتی ہیں ، اگر میں کوئی بات سمجھا رہا ہوں کہ اس کام کو کس طرح کرنا چاہیے تو گندی گندی گالیاں دے رہے ہیں اور بات نہیں سن رہے ۔

عامر لیاقت نے تنقید کے تیر چلاتے ہوئے کہا کہ اصولی طور پر منتخب راکین وہاں بیٹھے ہوتے ، اب دو دن سے وہان پر اسد عمر اور خسرو بختیار بیٹھے ہیں اس سے پہلے حفیظ شیخ اور ظفر علی بیٹھے تھے ۔جب آپ منتخب اراکین سے پوچھیں تو ہم بتائیں گے ، منتخب اراکین گراونڈ پر ہیں ، آپ مجھے گراونڈ پر دیکھ رہے ہیں ، میں جانتاہوں کہ اس وقت کیا پریشانی ہے ، مجھ سے پوچھیں میں بتاﺅں گا ۔

عامر لیاقت کا کہناتھا کہ میں عمران خان کو بتاﺅں کہ آپ یہاں تشریف لائیں ، آپ یہاں پر سامان بھجوائیں ، وہ بات نہیں کر نے دے رہے ، اور جب بات کرتاہوں تو پھر سوشل میڈیا پر گالیاں دینا شروع ہو جاتے ہیں ۔عامر لیاقت نے کہا کہ ہمیں اڑھائی سو راشن کے بیگ ملنے تھے ، جس پر کیمرہ مین نے سوالیہ انداز میں کہا کہ ” اڑھائی ہزار “ ، عامر لیاقت بولے کہ نہیں ہر ضلع کے ایک رکن قومی اسمبلی کو اڑھائی سو بیگ ملنے تھے وہ بھی ابھی تک نہیں ملے ہیں۔

کیمرہ مین نے کہاکہ کراچی کی آبادی ساڑھے چار کروڑ ہے ۔ عامر لیاقت نے کہا کہ کراچی نے ہمیں 14 سیٹیں دی ہیں ، اڑھائی سو بیگ سے کیا بنے گا ،چھ ہزار بیگ ہم بانٹ رہے ہیں یہاں پر لیکن تقریبادس ہزار بیگ بن رہے ہیں ، میں خود بہت پریشان ہوں ، میرے علاقے میں لوگ رو رہے ہیں ۔

چھ ہزار بیگ ہم بانٹ رہے ہیں ،، بن یہاں پر دس ہزار سے بھی زہادہ رہے ہیں ،، میں خود بہت پریشان ہوں ،میرے علاقے میں لوگ رو رہے ہیں ،

ویڈیو دیکھیں:

مزید :

قومی -