کیا کورونا وائرس امریکی فوج نے ووہان پہنچایا؟ چین کے دعوے پر برطانیہ کا حیران کن موقف بھی آگیا

کیا کورونا وائرس امریکی فوج نے ووہان پہنچایا؟ چین کے دعوے پر برطانیہ کا ...
کیا کورونا وائرس امریکی فوج نے ووہان پہنچایا؟ چین کے دعوے پر برطانیہ کا حیران کن موقف بھی آگیا

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ کی طرف سے چین پر الزام لگایا گیا کہ کورونا وائرس چین کی ایک لیبارٹری میں تیار کیا گیا اور وہاں سے پھیلا۔ اس کے جواب میں چین کی طرف سے الزام سامنے آ گیا کہ یہ وائرس امریکہ نے تیار کیا اور اس کے جنگی مشقوں کے لیے چین آنے والے فوجیوں نے ووہان میں پھیلایا۔ اب اس الزام تراشی میں برطانیہ کا موقف سامنے آ گیا ہے اور برطانوی حکومت چین پر برس پڑی ہے۔ میل آن لائن کے مطابق وزیراعظم بورس جانسن کے ایک اتحادی کا کہنا ہے کہ کورونا وائرس کے معاملے پر چین کا موقف برطانیہ اور چین کے تعلقات پر شدید منفی اثرات مرتب کر سکتا ہے۔ برطانیہ کے سینئر وزراءمطالبہ کر رہے ہیں کہ چین کے ساتھ برطانیہ کے تعلقات پر فوری نظرثانی کی جائے۔

رپورٹ کے مطابق وزیراعظم بورس جانسن پر ان کی کابینہ کے بیشتر اراکین کی طرف سے شدید دباﺅ ڈالا جا رہا ہے کہ چینی کمپنی ہواوے کے ساتھ 5جی نیٹ ورک کی تیاری کا معاہدہ ختم کیا جائے۔ اس معاہدے کے تحت ہواوے کو برطانیہ میں فائیو جی نیٹ ورک قائم کرنا ہے۔ برطانوی حکام کا کہنا ہے کہ چینی حکومت کی طرف سے کورونا وائرس کے متعلق غلط اطلاعات پھیلائی جا رہی ہیں۔چینی حکومت جانتی ہے کہ وہ غلط جا رہی ہے اور بجائے وائرس کے پھیلاﺅ کی ذمہ داری قبول کرنے کے الٹا جھوٹ بول رہی ہے۔سابق ٹوری لیڈر ڈنکین سمتھ نے اپنے ایک آرٹیکل میں لکھا ہے کہ ”ایک بار ہم اس وباءسے نمٹ لیں، اس کے بعد ضروری ہے کہ ہم چین کے ساتھ تعلق پر نظرثانی کریں۔“

مزید :

برطانیہ -