کرپٹ عناص کو قانون کے کٹہرے میں لانے کیلئے کوششیں تیز کی جائیں: چیئر مین نیب 

  کرپٹ عناص کو قانون کے کٹہرے میں لانے کیلئے کوششیں تیز کی جائیں: چیئر مین ...

  

 اسلام آباد(سٹاف رپورٹر)قومی احتساب بیورو کے چیئرمین جسٹس(ر) جاوید اقبال نے نیب افسران کو کہا ہے کہ بدعنوان عناصر کو قانون کے کٹہرے میں لانے اور ان سے معصوم پاکستانی شہریوں سے لوٹی گئی رقم وصول کرکے قومی خزانہ میں جمع کرانے کے لئے اپنی کوششیں دوگنا کریں، اتوار کو اپنے بیان میں چیئرمین نیب نے کہا ہے کہ نیب بدعنوانی کے خاتمے اور بدعنوان عناصر سے لوٹی گئی رقم وصول کرنے کے لئے قائم کیا گیا تھا، نیب نے اپنے قیام سے لے کر اب تک بالواسطہ اور بلا واسطہ طور پر 714ارب روپے قومی خزانہ میں جمع کروائے ہیں،ان کا کہنا تھا کہ نیب مقدمات میں سزا کی شرح 68.8فیصد ہے۔ پاکستان واحد ملک ہے جس نے بدعنوانی کے خاتمے کے تناظر میں تعاون بڑھانے اور سی پیک منصوبوں کی نگرانی کیلئے چین کے ساتھ مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کئے ہیں تاکہ ترقیاتی منصوبوں کو پایہ تکمیل تک پہنچایا جائے،چیئرمین نیب کا کہنا تھا کہ قومی ادارے کا کسی سیاسی جماعت، گروپ یا فرد سے کوئی تعلق نہیں ہے،نیب کا تعلق صرف ریاست پاکستان سے ہے، انہوں نے تمام علاقائی بیوروز کو ہدایت کی کہ نیب افسران نیب میں آنے والے تمام افراد کا احترام کریں کیونکہ نیب انسان دوست ادارہ ہے۔

چیئرمین نیب

مزید :

صفحہ اول -