سوات پریس کلب کی غیر قانونی بندش کسی صورت قبول نہیں‘ سبز علی ترین

سوات پریس کلب کی غیر قانونی بندش کسی صورت قبول نہیں‘ سبز علی ترین

  

چارسدہ (بیورورپورٹ) سوات پریس کلب کی غیر قانونی بندش کسی صورت قبول نہیں۔پریس کلب کی بندش سے سوات کے لاکھوں عوام اپنے حق کی آواز بلند کرنے سے محروم رہ جائیں گے۔ چارسدہ پریس کلب کے صحافی سوات پریس کلب کے صحافیوں کے جدوجہد میں بھرپور ساتھ دیں گے۔تفصیلات کے مطابق چارسدہ پریس کلب کے صدر سبز علی خان ترین، نائب صدر کفایت اللہ یوسفزئی، جنرل سیکرٹری سرتاج خان،جائنٹ سیکرٹری ناصرعلی شاہ اور دیگر صحافیوں نے سوات پریس کلب کی بندش کو صحافیوں کا گلہ گھونٹنے کے مترادف قرار دیتے ہوئے وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان سے مطالبہ کیا کہ سوات پریس کلب کے بندش کا فیصلہ فوری طور پر واپس لیں کیونکہ پریس کلب کی بندش سے نہ صرف سوات کے لاکھوں عوام کی آواز بند ہوجائے گی بلکہ صحافیوں کی صحافتی سرگرمیوں پر بھی منفی اثر پڑے گا۔انہوں نے کہاکہ سوات کے صحافیوں نے دہشت گردی کے لہر میں حکومت کا بھرپور ساتھ دیا تھا اور دہشت گردوں کے براہ راست حملوں کا نشانہ بھی بنے۔سوات کے صحافیوں کے قربانیوں کو کسی صورت نظر انداز نہیں کیا جا سکتا۔انہوں نے واضح کیا کہ چارسدہ پریس کلب کے صحافی سوات پریس کلب کے صحافیوں کے شانہ بشانہ کھڑی رہے گی اور کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کرے گی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -