مظفرگڑھ:تلیری کینال کی بندش پر کسانوں کا احتجاج‘ نعرے بازی

  مظفرگڑھ:تلیری کینال کی بندش پر کسانوں کا احتجاج‘ نعرے بازی

  

خان گڑھ(نما ندہ پاکستان) خان گڑھ و گردونواح کے رہائشی باغبان، کسانوں اور چھوٹے کاشتکاروں ملک فیض بخش، محمد اقبال، دلدار حسین، رف احمد، منظور حسین، اللہ ڈتہ، عبدالجبار، لئیق احمد، محمد آصف، نذرحسین، کریم بخش سمیت دیگر نے ایگری فورم رجسٹرڈ مظفرگڑھ کے زیراہتمام تلیری کینال مظفرگڑھ کی جبری بندش پر گزشتہ روز احتجاج کرتے ہوئے میڈیا کو بتایا کہ تلیری کینال مظفرگڑھ کو 6 ماہ قبل بند کردیا تھا جو تاحال بند پڑی ہے جس کی وجہ سے تحصیل مظفرگڑھ (بقیہ نمبر26صفحہ6پر)

بھر میں سینکڑوں ایکٹر رقبہ پر گندم کی کاشت اور تیاری میں کسانوں نے مہنگے داموں ڈیزل خرید کرکے آبپاشی کی اور انہیں مالی نقصان کا سامنا کرنا پڑا اور کسان طبقہ مقروض ہو چکا ہے جبکہ اب آموں کے باغات کو پانی کی شدید ضرورت ہے مگر نہریں پھر بھی بند ہیں متعدد بار انہار حکام کو پانی کی فراہمی کیلئے زبانی و تحریری طور پر آگاہ کیا مگر ان کی کوئی شنوائی نہیں ہوئی کیونکہ عرصہ دراز سے تعینات ایکسئین انہار مظفرگڑھ کسان کش پالیسیوں پر گامزن ہے اور حکومتی ویژن کے برعکس کسانوں کے مسائل کے حل میں رکاوٹ ہے  جس کی پرزور مذمت کرتے ہیں انہوں نیکہا کہ موجودہ حکومت نے تو انتخابی مہم میں اقتدار حاصل کرنے کے لئے کسانوں کو پیکج اور ریلیف دینے کے وعدے کیے مگر جونہی اقتدار حاصل کر لیا تو تمام انتخابی وعدوں سے منحرف ہو گئے اور اب حال یہ ہے کہ ضلع مظفرگڑھ کے کسانوں کو فراہم کیا جانے والا نہری پانی تک بند ہے کسانوں نے ضلع مظفرگڑھ کے کسانوں سے سوتیلی ماں جیسا سلوک بند کرنے اور تلیری کینال مظفرگڑھ سمیت ضلع بھر کی نہروں میں پانی کی فوری فراہمی کیلئے وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

تلیری کنال

مزید :

ملتان صفحہ آخر -