نوٹیفکیشن کہاں گیا؟چیئرمین‘ کونسلرز کی بحالی کا ابہام بدستور موجود

  نوٹیفکیشن کہاں گیا؟چیئرمین‘ کونسلرز کی بحالی کا ابہام بدستور موجود

  

میلسی(تحصیل رپورٹر)بلدیاتی اداروں کی سپریم کورٹ کی جانب سے بحالی کے باوجود چیئرمین اور کونسلرز کی بحالی کا ابہام بدستور موجود، حکومتی سطح پر نوٹیفکیشن جاری نہ ہونے کی وجہ سے بحال ہونے والے ادارے ایک بار پھر باہمی کشمکش کا شکار ہو جانے کے خطرات بڑھ گئے۔ تفصیل کیمطابق چند روز قبل سپریم کورٹ آف پاکستان کی جانب سے پنجاب بھر کے تمام بلدیاتی اداروں کو بحال کر دیا گیا اس سلسلے میں پنجاب بھر کے 36 اضلاع میں معطل ہونے(بقیہ نمبر5صفحہ6پر)

 والے میئرز، ڈپٹی میئرز، چیئرمین، وائس چیئرمین، ڈسٹرکٹ کونسل، میونسپل کمیٹیز اور یو سی چیئرمینوں اور کونسلرز کی جانب سے ایک دوسرے کو مبارکبادوں کا سلسلہ کئی روز تک سوشل میڈیا کے ذریعے جاری رہا تا ہم بعض قانونی ماہرین کے مطابق سپریم کورٹ کی جانب سے بلدیاتی اداروں کو بحال کیا گیا ہے لیکن اس وقت کے منتخب عوامی نمائندے بحال نہیں کیئے گئے اس سلسلے میں حکومت نے بھی کوئی نوٹیفکیشن جاری نہیں کیا جس کی وجہ سے اس بارے تا حال ابہام موجود ہے یہی وجہ ہے کہ اس وقت کے عوامی نمائندوں نے ابھی تک اپنے عہدوں کا باقاعدہ چارج نہیں سنبھالا واضح رہے کہ بلدیاتی اداروں کے 2015ء میں کرائے گئے انتخابات میں پنجاب بھر میں اکثریتی طور پر مسلم لیگ (ن) کے نمائندگان کامیاب ہوئے تھے اور اگر اب ان کی دوبارہ بحالی ہوئی تو پنجاب میں ایک بار پھر مسلم لیگ (ن) کا سرکاری اداروں میں عمل دخل بڑھ جائیگا یہی وجہ ہے کہ پنجاب حکومت نے اس سلسلے میں تا حال خاموشی اختیار کر رکھی ہے۔

ابہام

مزید :

ملتان صفحہ آخر -