ہندو برادری کا رنگوں کا 3روزہ تہوار ہولی روایتی جوش و خروش سے شروع 

 ہندو برادری کا رنگوں کا 3روزہ تہوار ہولی روایتی جوش و خروش سے شروع 

  

اوتھل (آئی این پی) ہندو برادری کا  رنگوں کا تہوار ہولی روایتی جوش و خروش سے شروع ہوگیا۔یہ تہوار تین دن تک جاری رہتا ہے۔جس میں مندروں میں پوجا پاٹھ کے وقت پاکستان کی بقاء،سالمیت،ترقی و خوشحالی کے لئیے خصوصی دعائیں کی جاتی ہیں۔تفصیلات کے مطابق پاکستان بھر کی طرح لسبیلہ میں بھی ہندو برادری اپنا مذہبی تہوار ہولی منا رہی ہے۔ رنگوں کے اس تہوار کو پورے مذہبی جوش و جذبے سے منایا جاتا ہے،ہندو کمیونٹی رنگوں کے اس تہوار میں اپنے محلوں کے مختلف گلیوں اور چوراہوں پر روایتی ڈانڈیا اور گربہ رقص کرتے ہیں، جب کہ نوجوان ڈھول کی تھاپ پر خوب ہلہ گلہ کرتے ہیں۔اس موقعے پر مندروں اور گھروں کو خصوصی طور پر سجایا جاتا ہے۔ ہندو برادری سے وابستہ افراد اس کے انتظامات پہلے سے ہی مکمل کررکھے ہوتے ہیں۔روایتی طور پر شام ڈھلتے ہی ہولکا کو جلا کر تہوار کا آغاز کیا جاتا ہے۔ عقیدے کے مطابق مندروں میں خصوصی دعائیہ تقاریب منعقد کی جاتی ہیں جس میں ہندو برادری پوری عقیدت و احترام سے شرکت کرتی ہے۔مندروں مں ہونے والی پوجا پاٹھ کے وقت پاکستان کی سلامتی، خوشحالی اور ترقی کے لیے خصوصی دعائیں مانگی جاتی ہیں۔اس دن مرد،عوتیں اور بچے خوشی کے اظہار کے لئیے ایک دوسرے کے اوپر مختلف دیدہ زیب رنگ پھینکتے ہیں،اگر کسی کی کسی سے ناراضگی ہے تو وہ ایک دوسرے کے اوپر رنگ پھینک کر اپنی ناراضی دور کرتے ہیں۔خواتین بھی ایک دوسرے کے گھروں میں جاکر ایک دوسرے کے اوپر رنگ ڈال کر مبارکباد دیتی ہیں اورخوشیاں مناتی ہیں۔یہ سلسلہ رات گئے تک جاری رہتا ہے۔

ہولی تہوار

مزید :

صفحہ اول -