نوجوان لڑکی کی انٹرنیٹ پر شادی شدہ آدمی سے دوستی ، ایک دن اس شخص نے ایسی بات کہہ دی کہ جذباتی ہو کر بغیر ملاقات فون پر ہی نکاح پڑھا دیا گیا لیکن پھر پتہ چلاکہ۔۔۔

نوجوان لڑکی کی انٹرنیٹ پر شادی شدہ آدمی سے دوستی ، ایک دن اس شخص نے ایسی بات ...
 نوجوان لڑکی کی انٹرنیٹ پر شادی شدہ آدمی سے دوستی ، ایک دن اس شخص نے ایسی بات کہہ دی کہ جذباتی ہو کر بغیر ملاقات فون پر ہی نکاح پڑھا دیا گیا لیکن پھر پتہ چلاکہ۔۔۔

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) عمزاد خان عرف ایان خان سلفی نامی شخص کو سعودی عرب سے واپس بھارت اس لیے ڈی پورٹ کیا گیا تھا کہ وہ شدت پسند تنظیم داعش کے ساتھ روابط رکھے ہوئے تھا اور اس کی ہندوستانی شاخ ’جنود الخلافہ فی الہند‘ کے لیے نوجوان لڑکے لڑکیوں کو بھرتی کر رہا تھا۔ انڈیا ٹائمز کی رپورٹ ایان خان نے بھارتی ریاست اترپردیش کے شہر اعظم گڑھ کی ایک 24سالہ لڑکی کو بھی اپنے جال میں پھنسایا۔ اس پر فون کال کے ذریعے ہی شادی کی اور اسے شام آنے کو کہا۔ 

37سالہ عمزاد خان ریاست راجستھان کے شہر چرو کا رہائشی تھا جس نے گزشتہ سال مئی میں اعظم گڑھ کی اس لڑکی سے شادی کی۔ سعودی عرب کی طرف سے ڈی پورٹ کیے جانے پر بھارتی سکیورٹی اداروں نے اسے گرفتار کر لیا جن کی تفتیش میں اس نے اعتراف کیا ہے کہ ”یہ لڑکی میڈیکل کی طالبہ تھی۔ وہ اکثر اہلحدیث اور اسلام کے متعلق مجھ سے سوالات کرتی تھی۔ میں نے اسے اپنے علم سے متاثر کیااور وہ میری محبت میں گرفتار ہو گی۔ میں نے اسے بتایا بھی تھا کہ میں شادی شدہ ہوں اور دو بچوں کا باپ ہوں۔ اس کے باوجود اس نے فون پر ہی میرے ساتھ نکاح پڑھ لیا اور شام آنے کے لیے بھی تیار ہو گئی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس