مصالحتی عدالتوں نے 125 مقدمات میں ٹوٹے دلوں کو دوبارہ جوڑدیا

مصالحتی عدالتوں نے 125 مقدمات میں ٹوٹے دلوں کو دوبارہ جوڑدیا

لاہور(نامہ نگار)مصالحتی عدالتوں کی کارکردگی کے حوالے سے جاری رپورٹ کے مطابق مصالحت کی3 عدالتوں نے تک15مارچ سے 23مئی تک فیملی عدالتوں سے بھجوائے گئے،184مقدمات کی سماعت کی جن میں سے 125مقدمات میں میاں بیوی کے درمیان صلح کرائی۔

اور خواتین اور مردوں کی خواہش پر ان کے کیسوں کو نمٹانے کے بعد واپس سول کورٹ ڈگریوں کے لئے بھجوا ئے ۔واضح رہے کہ25مقدمات میں کوشش کے باوجود مصالحت نہ ہوسکی اورفریقین اپنے اپنے موقف پر ڈٹے رہے جس پر مصالحتی مرکز نے ان کے کیس واپس سول عدالتوں کو بھجوا دیئے ۔اس کے ساتھ ساتھ 15کیس اس وقت مصالحتی مرکز میں زیر سماعت ہیں جس میں فریقین کو نوٹس جاری کئے گئے ہیں۔اس حوالے سے وکلاء کا کہنا ہے کہ مصالحتی عدالتوں کا قیام خوش آئند ہے اوراس سے کافی حد تک میاں بیوی گھریلو ناچاقی کی وجہ سے لڑائی جھگڑوں کے باعث آپس میں دوریاں کو ختم کرکے ان میں صلح کرواکر ان کا گھرانہ بسایا جارہاہے جو کہ ایک احسن اقدام ہے

مزید : علاقائی