پی ٹی وی ٹرانسمیشن ’’رمضان پاکستان ‘‘ میں مالی بے ضابطگیوکا انکشاف

پی ٹی وی ٹرانسمیشن ’’رمضان پاکستان ‘‘ میں مالی بے ضابطگیوکا انکشاف

لاہور(فلم رپورٹر)رمضان المبارک کے دوران پاکستان ٹیلی وژن کراچی مرکز سے پیش کی جانے والی ٹرانسمیشن ’’رمضان پاکستان‘‘کے حوالے سے بہت ساری مالی بے ضابطگیوں کا انکشاف ہوا ہے ۔با وثوق ذرائع کے مطابق اس ٹرانسمیشن کے لئے8سے 10کروڑ کا بجٹ مختص کیا گیا ہے ۔اس بجٹ کو’’رمضان پاکستان‘‘کے ایگزیکٹو پروڈیوسر امین میمن اور شجاعت اللہ نے جس طرح ناجائز طور پر استعمال کیا ہے اس کی مثال ماضی میں کہیں نہیں ملتی۔سیٹ ڈیزائننگ سے لے کرکانٹنٹ اور کو آرڈینیشن کے نام پر جو بے ضابطگی کی گئی ہے اس سے قومی چینل کے وقار کو شدید جھٹکا لگا ہے ۔امین میمن اور شجاعت اللہ نے کانٹنٹ کے لئے دو ایسے صاحبان متین محمود اور طارق آزاد کا انتخاب کیا ہے جو کہ نجی چینلز پر فلمی پروگرام لکھتے ہیں ان کا مذہبی کانٹنٹ لکھنے کا کوئی تجربہ نہیں ہے ۔اس کام کے لئے ان دونوں کو 10لاکھ روپے سے زائد ادا کئے جائیں گے کیا پی ٹی وی کواس مقصد کے لئے کوئی مذہبی سکالر،مدرس اور عالم دین نہیں ملا۔پی ٹی وی کراچی مرکز کے شعبہ سیٹ ڈیزائننگ میں 40کے قریب لوگ کام کررہے ہیں ان کی موجود گی میں باہر سے سیٹ ڈیزائنر ہائر کرکے اس سے 40لاکھ روپے میں سیٹ لگوایا گیا ہے۔ڈیزائننگ کا ٹھیکہ باہر دینے پر کارکنان سراپا احتجاج ہیں۔ اس کے علاوہ آفاق ہاشمی نامی ایک شخص کو10لاکھ روپے میں گیسٹ کو آرڈینیشن کے لئے رکھا گیا ہے کیا یہ کام پی ٹی وی میں موجود ریسورس پرسن کو سونپا نہیں جا سکتا تھا جو کہ کوآرڈینیشن کے لئے ہی رکھا گیا ہے۔ ذرائع نے یہ بھی بتایا ہے کہ سحری ٹرانسمیشن کے لئے قومی چینل پر ایک ایسے شخص جنید اقبال کو میزبانی کے فرائض سونپے گئے ہیں جو نجی چینل پر حکومت مخالف باتیں کرتے ہوئے کہتا ہے کہ جب بھی عمران خان دھرنے یا احتجاج کی کال دیتے ہیں تو حکومت کوئی نہ کوئی مسئلہ کھڑا کردیتی ہے حکومت کی مخالفت میں اس کی ویڈیوز سوشل میڈیا پر موجود ہیں۔ افطار ٹرانسمیشن کے دوران لائٹنگ انتہائی ناقص تھی احسن خان کافی دیر تک اندھیرے میں کھڑے نظر آرہے تھے اور براہ راست نشریات شروع ہونے کے بعد بھی لوگ سیٹ پر پھرتے ہوئے دکھائی دے رہے تھے ۔پی ٹی وی کے ایک اہلکار کا کہنا ہے کہ عطاء الحق قاسمی ہمارے ملک کے ایک بہت بڑے ادیب ،دانشور،شاعر اور کالم نگار ہونے کے ساتھ ساتھ اس قومی چینل کے چیئرمین کی حیثیت سے بھی فرائض انجام دے رہے ہیں ان کی موجودگی میں ایسا ہورہا ہے جو کہ ایک لمحہ فکریہ ہے ان کو فوری طور پر ان تمام باتوں کا نوٹس لینا چاہیے کیونکہ پی ٹی وی کی بحالی کے حوالے سے سب کو ان سے بہت توقعات وابستہ ہیں۔ ان تمام باتوں کی روشنی میں پاکستان ٹیلی وژن کی کراچی سے پیش کی جانے والی خصوصی ٹرانسمیشن ’’رمضان پاکستان‘‘ہر اعتبار سے ناقص اور غیر معیاری قرار دی جا سکتی ہے ۔

مزید : کلچر