عرب دنیا سے اب تک کی سب سے خطرناک خبر آگئی، سعودی عرب کے سب سے طاقتور لوگ قطر کے شاہی خاندان کے خلاف اُٹھ کھڑے ہوئے، امیر کی ولدیت پر ہی سوالیہ نشان لگا دیا، یہ سعودی کون ہیں؟ جان کر آپ کا بھی منہ کھلا کا کھلا رہ جائے گا

عرب دنیا سے اب تک کی سب سے خطرناک خبر آگئی، سعودی عرب کے سب سے طاقتور لوگ قطر ...
عرب دنیا سے اب تک کی سب سے خطرناک خبر آگئی، سعودی عرب کے سب سے طاقتور لوگ قطر کے شاہی خاندان کے خلاف اُٹھ کھڑے ہوئے، امیر کی ولدیت پر ہی سوالیہ نشان لگا دیا، یہ سعودی کون ہیں؟ جان کر آپ کا بھی منہ کھلا کا کھلا رہ جائے گا

  

ریاض(مانیٹرنگ ڈیسک) دوسرے عرب ممالک کے برعکس سعودی ایران چپقلش میں قطر نے اپنا وزن ایران کے پلڑے میں ڈال دیا ہے جس پر سعودی عرب میں وہابی مکتبہ فکر کی بنیاد رکھنے والے ابن عبد الوہاب کی آل اولاد نے قطر کے ساتھ قطع تعلقی کا اعلان کر دیا ہے۔ یروشلم پوسٹ کی رپورٹ کے مطابق سعودی اخبار اوکاز میں شائع ہونے والے بیان میں ابن عبدالوہاب کی نسل کے 200افراد نے مطالبہ کیا ہے کہ” قطر میں ابن عبدالوہاب کے نام سے منسوب مسجد کا نام تبدیل کیا جائے کیونکہ اب قطر میں سلفی عقیدے پر اس کی روح کے مطابق عمل نہیں ہو رہا۔“ یہ مسجد 18ویں صدی عیسوی میں بنائی گئی تھی اور اس کا نام ان کے نام پر رکھا گیا تھا۔ قطر میں اس وقت اکثریت اسی وہابی عقیدے کی پیروکار ہے۔

سعودی عرب میں ایک ایسے عام شہری کا سر قلم کرنے کا فیصلہ کہ دنیا میں ہنگامہ برپا ہو گیا، یہ کون ہے؟ جان کر آپ بھی دنگ رہ جائیں گے

رپورٹ کے مطابق ابن عبدالوہاب کی آل کی جانب سے یہ اقدام قطری امیر کی ایرانی صدر کو کی گئی مبینہ فون کال کی تفصیلات منظرعام پر آنے کے بعد کیا ہے۔ دونوں رہنماﺅں کے درمیاں یہ فون کال مبینہ طور پر سعودی عرب میں ہونے والی عرب اسلامک امریکن کانفرنس کے بعد ہوئی جس میں گفتگو کرتے ہوئے قطری امیر نے ایران کو اپنی حمایت کا یقین دلایا اور کہا کہ قطر ایران کے ساتھ ایسے مضبوط تعلقات قائم کرنا چاہتا ہے کہ ماضی میں اس کی مثال نہ ملتی ہو۔

واضح رہے کہ اس وقت قطر کے حکمران خاندان کی جڑیں بھی نجد کے علاقے سے ملتی ہیں جہاں سے ابن عبدالوہاب کا تعلق تھا، تاہم یہ واضح نہیں ہے کہ دونوں میں براہ راست خاندانی تعلق ہے یا نہیں۔

مزید : عرب دنیا