حمزہ علی عباسی نے کسی بھی رمضان ٹرانسمیشن کا حصہ نہ بننے کا اعلان کردیا

حمزہ علی عباسی نے کسی بھی رمضان ٹرانسمیشن کا حصہ نہ بننے کا اعلان کردیا
حمزہ علی عباسی نے کسی بھی رمضان ٹرانسمیشن کا حصہ نہ بننے کا اعلان کردیا

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کے صف اول کے ڈرامہ اداکار و سیاسی رہنما حمزہ علی عباسی نے کسی بھی رمضان ٹرانسمیشن کا حصہ نہ بننے کا اعلان کردیا۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ایک پیغام میں حمزہ علی عباسی کا کہنا تھا کہ اب وہ کسی بھی رمضان ٹرانسمیشن کا حصہ نہیں بنیں گے کیونکہ وہ جن موضوعات پر گفتگو کرنا چاہتے ہیں ان پر پاکستانی میڈیا بات کرنے کیلئے تیار نہیں ہیں۔’ میں ہمیں در پیش اصل مسائل پر بات کرنا چاہتا ہوں ، معاشرے میں پھیلی نا انصافی پر گفتگو کرنا چاہتا ہوں لیکن ہمارا میڈیا اس پر بات نہیں کرنا چاہتا جس پر میں آواز اٹھانا چاہتا ہوں“۔انہوں نے کہا کہ میں صرف یہ واضح کرنا چاہتا تھا اور بتانا چاہتا تھا کہ میں کوئی بھی رمضان ٹرانسمیشن نہیں کر رہا۔

پیمرا نے آج نیوز اور ٹی وی ون کو فوری معافی نشر کرنے کا حکم جاری کر دیا ،معافی کے بعد حمزہ علی عباسی،شبیر ابوطالب اور مولانا کوکب نورانی پروگراموں میں شرکت کر سکیں گے

واضح رہے کہ حمزہ علی عباسی نے گزشتہ برس نجی ٹی وی پر رمضان ٹرانسمیشن کے دوران انتہائی حساس موضوع پر گفتگو کرنا شروع کردی تھی جس کے بعد ایک اور ٹی وی چینل پر رمضان ٹرانسمیشن کرنے والے ایک مولانا صاحب نے ان کے خلاف فتویٰ بھی جاری کردیا تھا۔ اس سے پہلے کہ حالات کوئی بھی نیا رخ اختیار کرتے پیمرا نے بروقت کارروائی کرتے ہوئے حمزہ علی عباسی اور مذکورہ مولانا صاحب کے رمضان ٹرانسمیشن کرنے پر پابندی عائد کردی تھی۔یہاں یہ بات بھی دلچسپی سے خالی نہ ہوگی کہ حمزہ علی عباسی ان دنوں ایک نجی ٹی وی پر سیاسی ٹاک شو کر رہے ہیں جبکہ ان کے خلاف فتویٰ جاری کرنے والے مولانا صاحب  بھی  اسی ٹی وی چینل پر رمضان ٹرانسمیشن کر رہے ہیں، (یعنی پچھلے سال ایک دوسرے کی مخالف رہنے والی ہستیاں اب کولیگ بن چکی ہیں)۔

مزید : تفریح