گردے کے مریض کی زندگی بچائیں

گردے کے مریض کی زندگی بچائیں
گردے کے مریض کی زندگی بچائیں

  



ہمارے ایک دوست رفیق کا بیٹایاسر رفیق آج کل گردوں کے مرض میں مبتلا ہو کر زندگی کی جنگ لڑ رہا ہے۔ 26سالہ نوجوان کے سات سو سے زائد ڈائیلسز ہوچکے ہیں اور خون کی صفائی کے دوران رفیق اپنے بیٹے کے ساتھ خود بھی ہم پلہ جیتے اور مرتے ہیں۔

بیٹے کی تکلیف کو برداشت نہ کرتے ہوئے چند ماہ قبل رفیق کی اہلیہ اور یاسر کی والدہ اس جہاں فانی سے کوچ کرگئی ہیں، مگر رفیق جو ایک با عمل اور صبر کرنے والا انسان ہے، اپنے بیٹے کے علاج کے لئے ہر وقت فکر مند ہے اور خداکے حضور دعا گو ہے کہ کوئی مسیحا اس کی مدد کو آئے۔ پچھلے دنوں جب اس کے بیٹے کی حالت زیادہ خراب ہوگئی تو ڈاکٹروں نے گردوں کی ٹرانسپلانٹ کا مشورہ دیا۔

رفیق پریشان ہوگیا اور اپنے بیٹے کی جان بچانے کے لئے گردے کی تلاش میں نکل پڑا۔ اللہ کی کرنی کہ رفیق کے بیٹے کے خالہ زاد بھائی کا گردہ یاسر رفیق سے میچ ہوگیا اور خالہ زاد بھائی گردہ عطیہ کرنے کے لئے بھی تیار ہوگیا، ٹیشو بھی میچ کرگئے، مگر اس سارے علاج کا خرچہ تقریبا 35لاکھ روپے بنتا ہے۔ جو رفیق کے لئے اکٹھا کرنا ناممکن ہے، کیونکہ ایک غریب آدمی کے لئے اتنی بڑی رقم کا انتظام کرنا بہت مشکل ہے۔

میں اپنے کالم کے ذریعے وزیر اعلیٰ پنجاب اور مخیر حضرات سے اپیل کرتا ہوں کہ وہ یاسر رفیق کی مدد کے لئے آگے آئیں اور اس کی زندگی بچانے کے لئے اس کی مدد کریں، کیونکہ قرآن پاک میں اللہ تعالیٰ کا فرمان ہے کہ جس نے ایک انسان کی جان بچائی، گویا اس نے پوری انسانیت کی جان بچائی۔

انسانی زندگی میں صحت کو بنیادی اہمیت حاصل ہے۔ کسی نے کیا خوب کہا ہے کہ ’’جان ہے تو جہان ہے‘‘۔۔۔ مگر آج کل جہاں زندگی بہت سے مسائل میں گھری ہوئی ہے اور ہمیں مجبوراًناقص غذاؤں کا شکار ہونا پڑتا ہے تو صحت کا متاثر ہونا بھی ایک عام سی بات ہے۔

خصوصاً بازاری کھانے تو انسانی صحت کے لئے زہر قاتل ہیں۔ آج کل دل، جگر اور گردوں کی بیماریاں جس طرح پھیل رہی ہیں، اس میں کھانے پینے میں احتیاط انتہائی ضرور ی ہے۔

حکومت کو چاہئے کہ صحت کے زیادہ سے زیادہ مراکز قائم کرے ، جہاں علاج کی مفت سہولتیں فراہم کی جائیں۔ آج کل پانی بھی صاف نہیں مل رہا۔ پانی میں آلودگی کی وجہ سے گردوں کی بیماریاں اور دیگر امراض کا خطرہ پیدا ہو جاتا ہے۔۔۔مخیرحضرات گردے کی ٹرانسپلانٹ کروانے میں اس با برکت مہینے میں بچے کو مشکل سے نکل کر جنت میں اپنا گھر بنا سکتے ہیں۔

مزید : رائے /کالم


loading...