حکومتی دعووں کے بر عکس سحر و افطار ، تراویح کے موقع پر لوڈ شیڈنگ جاری

حکومتی دعووں کے بر عکس سحر و افطار ، تراویح کے موقع پر لوڈ شیڈنگ جاری

  



لاہور)کامرس رپورٹر( ملک میں بجلی کی طلب 25 ہزار میگاواٹ سے تجاوز کر گئی جس کے باعث کمی مزیڈ بڑھ گئی۔مجموعی پیداوار اور شارٹ فال کا فرق کم ر ہ جانے کے باعث ملک میں کسی بھی وقت بڑے بریک ڈاؤن کا خطرہ بڑھ گیا ہے ۔حکومتی دعووں کے باوجود گزشتہ روز بھی سحر و افطار سمیت تراویح کے موقع پر لوڈ شیڈنگ کاسلسلہ جاری رکھا گیا ۔گزشتہ روز بھی بدترین لوڈ شیڈنگ کاسلسلہ جاری رہا جس نے نہ صرف لوگوں کی زندگی اجیرن اور معمولات زندگی شدید متاثر کر دیئے ۔ لوگوں کے لئے دن کا سکون اور رات کی نیند بھی خواب بن گئی ۔ باربار ہونے والی لوڈ شیڈنگ نے لوگوں کیلئے روزے مزید سخت بنا دیئے ۔ لوڈ شیڈنگ کے باعث ایک جانب گھروں میں سحری و افطار کے وقت پانی کی قلت کا سامنا کرنا رہا ہے تودوسری جانب مساجد میں روزہ داروں کو وضو کے لئے بھی پانی میسر نہیں ہو رہا ۔ شہروں میں بھی ہر گھنٹے کے بعد ایک گھنٹے اور کئی مقامات پر ایک گھنٹے بعد دو گھنٹے کی لوڈ شیڈنگ شروع کر دی گئی ہے ۔ لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ رات کوبھی جاری رکھا گیا ۔

لوڈ شیڈنگ

مزید : صفحہ آخر


loading...