اعلیٰ عدلیہ کے ججز کا امتحان ،ذمہ داریاں پوری کرنے کا وقت آ گیا

اعلیٰ عدلیہ کے ججز کا امتحان ،ذمہ داریاں پوری کرنے کا وقت آ گیا

  



کراچی : تجزیہ مبشر میر

الیکشن 2018ء عدلیہ کی اہمیت بڑھ گئی ،اعلیٰ ترین عدلیہ کے ججز پر ملک کی سب سے اہم ذمہ داریاں پوری کرنے کا وقت آگیا ۔سپریم کورٹ آف پاکستان کے چیف جسٹس ثاقب نثار پہلے ہی بہت اہمیت اختیار کرچکے ہیں ،ان کے ریمارکس زیر بحث رہتے ہیں ۔نیب کے چیئرمین بھی سابق جج ہیں۔ اس وقت اہم ترین کیس احتساب عدالتوں میں ہیں ۔الیکشن کمیشن کے سربراہ بھی سابق جج ہیں۔ ذرائع کے مطابق ریٹرننگ آفیسرز کو زیادہ اختیارات دینے کی تجویز زیر غور ہے ۔تمام ریٹرننگ آفیسرز اور ڈسٹرکٹ ریٹرننگ آفیسرز ماتحت عدالتوں کے جج ہیں ۔سابق چیف جسٹس ناصر الملک کے نگراں وزیراعظم کے تقرر نے عدلیہ کو یہ موقع فراہم کردیا ہے کہ وہ ملک کو داخلی بحران سے نکالنے کے لیے صاف اور شفاف انتخابات کروائے۔ جسٹس ناصر الملک نے 2000ء میں پی سی او کے تحت حلف لیا تھا جبکہ 2007ء کی ایمرجنسی میں حلف لینے سے انکار کردیا تھا ۔ان کو ایک بہترین استاد کی حیثیت سے بھی پہنچانا جاتا ہے ۔نامزد نگراں وزیراعظم مشہور زمانہ مختاراں مائی کیس اور نواز شریف طیارہ سازش کیس کے بینچ میں بھی شامل تھے ۔عوام کی توقعات ملک کی اعلیٰ عدلیہ کے ججز سے بہت بڑھ گئی ہیں ۔

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...