ٹی ایم او کوھاٹ کے ہاتھ قارون کا خزانہ لگ گیا

ٹی ایم او کوھاٹ کے ہاتھ قارون کا خزانہ لگ گیا

  



کوہاٹ(بیورو رپورٹ) ٹی ایم او کوھاٹ کے ہاتھ قارون کا خزانہ لگ گیا تین نامکمل پلازوں کے بعد مزید تین پلازوں کی تعمیر کا ٹینڈر جاری کر دیا تفصیلات کے مطابق ورکروں کو تنخواہوں کی بروقت ادائیگی نہ کرنے اور واپڈا کی نادہندہ ٹی ایم اے کوھاٹ نے شہر میں شبستان پلازہ‘ عجب خان آفریدی پلازہ اور کوتل پلازہ کے اوپر شادی ہال اور دیگر دفاتر کی تعمیر کے لیے ٹینڈر جاری کر دیا ان پلازوں کی تعمیر پر اپنے ذرائع سے لگ بھگ 60 کروڑ سے زائد رقم خرچ کی جائے گی دلچسپ بات یہ ہے کہ اس وقت گزشتہ 6 سالوں سے ٹی ایم اے کی نگرانی میں زیر تعمیر تحصیل پلازہ اور اباسین پلازہ کی تعمیر مکمل نہ ہو سکی جبکہ کوتل پلازہ جس کی تعمیر کو شروع ہوئے دس سالوں سے زائد عرصہ ہو چکا ہے وہ بھی نامکمل ہے ان پلازوں میں سے تحصیل پلازہ کی دکانوں کی نیلامی ہو چکی ہے جس سے تقریباً 14 کروڑ کی آمدنی ہوئی ہے اور یہ رقم ٹی ایم اے کے پاس موجود ہے مگر ادارے کے نااہل افسران اور تحصیل گورنمنٹ کی عدم دلچسپی کی وجہ سے مہینوں گزرنے کے باوجود ایک ٹرانسفارمر نہ لگ سکا تاکہ پلازہ سے آمدن شروع ہو سکے اور نہ ہی تحصیل پلازہ کے داخل گیٹ پر قائم دو دکانوں کو مسمار کیا جا سکا عوامی حلقے اور سنجیدہ تجارتی حلقے پریشان ہیں کہ سالوں سال فنڈز ہونے کے باوجود پلازے مکمل نہ کرنے والے افسران بغیر فنڈ کے ایک ہی وقت میں تین پلازوں کے ٹینڈر کیسے جاری کرتے ہیں شہریوں نے ٹی ایم او کوھاٹ جن کا ان ٹینڈرز کے فوری بعد عمرے کی ادائیگی پر جانے کا پروگرام ہے سے سوال کیا کہ کیا ان کے ہاتھ قارون کا خزانہ لگ گیا ہے یا پھر یہ تمام کھیل مبینہ طور پر کمیشن کھانے کے لیے رچایا گیا ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر