”کتنی زیادتی کی بات ہے آپ اکیلے کھڑے ہیں، میرے بس میں ہوتا تو۔۔۔“مریم نواز کے حاضری لگا کر چلے جانے کے بعد کیپٹن صفدر کو نیب پراسیکیوٹر نے ایسی بات کہہ دی کہ ہرکوئی دنگ رہ گیا

”کتنی زیادتی کی بات ہے آپ اکیلے کھڑے ہیں، میرے بس میں ہوتا تو۔۔۔“مریم نواز ...
”کتنی زیادتی کی بات ہے آپ اکیلے کھڑے ہیں، میرے بس میں ہوتا تو۔۔۔“مریم نواز کے حاضری لگا کر چلے جانے کے بعد کیپٹن صفدر کو نیب پراسیکیوٹر نے ایسی بات کہہ دی کہ ہرکوئی دنگ رہ گیا

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)احتساب عدالت میں ایون فیلڈ ریفرنس کی سماعت کے دوران نیب پراسیکیوٹر نے کیپٹن صفدر سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ کتنی زیادتی کی بات ہے آپ اکیلے کھڑے ہیں،میرے بس میں نہیں کہ5,6 لوگ آپ کے پیچھے کھڑے کر دیتا۔

تفصیلات کے مطابق شریف خاندان کیخلاف ایون فیلڈ ریفرنس کی سماعت احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کر رہے ہیں،آج مقدمے کے تیسرے ملزم کیپٹن صفدر اپنا بیان قلمبند کرا رہے ،ان کا کہناتھا کہ میری عمر 55 سال ہے اور میں گزشتہ 10 سال سے رکن قومی اسمبلی ہوں۔

کیپٹن صفدر نے بیان ریکارڈ کراتے ہوئے کہا کہ سپریم کورٹ نے زیرالتوادرخواستوں کونمٹانے کیلئے جے آئی ٹی تشکیل دی،مجھے اوراہلیہ کو 20 اپریل کے فیصلے میں شامل تفتیش ہونے کی ہدایت نہیں تھی۔

کیپٹن صفدر نے وکیل سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ کچھ باتیں میری شادی سے پہلے کی ہیں،ملزم کے وکیل نے عدالت سے کہا کہ کل حاضری سے استثنیٰ دےدیاجائے،اس پر احتساب عدالت کے جج نے کہا کہ کل دیکھیں گے۔

واضح رہے کہ آج ایون فیلڈ ریفرنس میں کیپٹن صفدر کا بیان قلمبند کیا جا رہا ہے تاہم نوازشریف اور مریم نوازان کو کمرہ عدالت میں چھوڑ کر پنجاب ہاﺅس جا چکے ہیں۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد


loading...