راولپنڈی میں 13 سالہ لڑکی بدفعلی کے بعد حاملہ ہوگئی لیکن لیڈی ڈاکٹر نے رشوت لے کر اسقاط حمل کردیا ، معاملہ عدالت پہنچا تو۔ ۔ ۔ مقامی عدالت نے تہلکہ خیز فیصلہ سنا دیا، مثال قائم کردی

راولپنڈی میں 13 سالہ لڑکی بدفعلی کے بعد حاملہ ہوگئی لیکن لیڈی ڈاکٹر نے رشوت لے ...
راولپنڈی میں 13 سالہ لڑکی بدفعلی کے بعد حاملہ ہوگئی لیکن لیڈی ڈاکٹر نے رشوت لے کر اسقاط حمل کردیا ، معاملہ عدالت پہنچا تو۔ ۔ ۔ مقامی عدالت نے تہلکہ خیز فیصلہ سنا دیا، مثال قائم کردی

  



راولپنڈی ، ٹیکسلا(ڈیلی پاکستان آن لائن)  مقامی عدالت نے 13 سالہ بچی سے بدفعلی اور پھر اس کے اسقاط حمل سے متعلق مقدمے کا فیصلہ سنا دیا اور نئی مثال قائم کردی۔ 

ایکسپریس نیوز کے مطابق ٹیکسلا میں ایڈیشنل سیشن جج ملک احمد ارشد نے 13 سالہ لڑکی سے جنسی زیادتی کیس کا فیصلہ سنا دیا۔ عدالت نے مرکزی ملزم محمد اشفاق کو جرم ثابت ہونے پر 20 سال قید با مشقت اور ایک لاکھ روپیہ جرمانہ کی سزا سنائی۔ایڈیشنل سیشن جج نے زیادتی کا شکار بچی کا اسقاط حمل کرنے والی لیڈی ڈاکٹر کو بھی 3 سال قید کی سزا سنادی۔

دوران سماعت انکشاف ہوا تھا کہ لیڈی ڈاکٹر طلعت نے مجرم محمد اشفاق سے 80 ہزار روپے رشوت لے کر بچی کا اسقاط حمل کیا تھا۔

مزید : جرم و انصاف /علاقائی /پنجاب /راولپنڈی


loading...