انڈونیشیا کی پاکستانی تاجروں کو نمائش میں شرکت کی دعوت

  انڈونیشیا کی پاکستانی تاجروں کو نمائش میں شرکت کی دعوت

  

کراچی (این این آئی)انڈونیشیا کے قونصل جنرل ٹوٹوک پریامانٹو نے پاکستان اور انڈونیشیا کے درمیان دوطرفہ تجارت کے فروغ کے لیے وفود کے تبادلے پر زور دیتے ہوئے کہاہے کہ انڈونیشیا اور پاکستان میں سرمایہ کاری اور جوائنٹ وینچر کے وسیع مواقع موجود ہیں لہٰذا دونوں ملکوں کے تاجر ایک دوسرے کے ملکوں میں دستیاب مواقعوں کو بروئے کار لاکر تجارتی حجم میں نمایاں اضافہ کرسکتے ہیں۔یہ بات انہوں نے انڈونیشیا قونصلیٹ میں دعوت افطار کے موقع پر کراچی ہول سیل گروسرز ایسوسی ایشن کے سرپرست اعلیٰ انیس مجید سے دوطرفہ تجارت کے امور پر تبادلہ خیال کرتے ہوئے کہی۔اس موقع پرکے ڈبلیوجی اے کے وائس چیئرمین عبدالرحمان آکبانی،،بشیر غفار اور فیصل انیس بھی موجود تھے۔

انڈونیشین قونصل جنرل نےکے ڈبلیوجی اے کو اکتوبر2019میں انڈونیشیا میں منعقد ہونے والی نمائش میں شرکت کی دعوت دیتے ہوئے کہاکہ پاکستانی تاجر انڈونیشین تاجروں سے بزنس ٹو بزنس میٹنگز کے ذریعے تجارت کی نئی راہیں تلاش کریں اور مارکیٹوں کا جائزہ بھی لیں۔انڈونیشین قونصلیٹ نمائش میں شرکت کرنے والے تاجروں کو رہائش اور ٹرانسپورٹ کی سہولت فراہم کرے گا۔ کراچی ہول سیل گروسرز ایسوسی ایشن کے سرپرست اعلیٰ انیس مجید نے انڈونیشین قونصل جنرل کی جانب سے نمائش میں شرکت کی دعوت قبول کرتے ہوئے کہاکہ کے ڈبلیو جی اے کا وفد اکتوبر میں منعقد ہونے والی نمائش میں شرکت کرے گا۔انہوں نے کہاکہ تجارتی وفود کے تبادلے سے دونوں ملکوں کے تاجرایک دوسرے کے مزید قریب آئیں گے اور دوطرفہ تجارت کو بھی فروغ حاصل ہوگا تاہم اس حوالے سے دونوں جانب سے سنجیدہ کوششیں کرنے کی ضرورت ہے۔

مزید :

کامرس -