چیک پوسٹ پر حملے کے وقت محسن داوڑ مسلح تھا، ساتھی ڈاکٹر عالم کا اعتراف

  چیک پوسٹ پر حملے کے وقت محسن داوڑ مسلح تھا، ساتھی ڈاکٹر عالم کا اعتراف

  

 اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک ) پشتون تحفظ موومنٹ (پی ٹی ایم) رہنما کے ساتھی ڈاکٹر عالم نے ویڈیو بیان میں اعتراف کیا ہے کہ محسن داوڑ چیک پوسٹ حملے کے وقت مسلح گروہ کیساتھ آیا تھا۔تفصیلات کے مطابق محسن داوڑ کے ساتھی ڈاکٹر عالم نے اعتراف کیا ہے کہ اس وقت محسن داوڑ مسلح تھا۔پی ٹیم ایم رہنما کے ساتھی ڈاکٹر عالم نے ویڈیو انٹرویو میں حقیقت بیان کرتے ہوئے بتایا کہ چیک پوسٹ پر حملے کے وقت محسن داوڑ مسلح گارڈ کے ساتھ تھا۔ جس سے ثابت ہوتا ہے کہ مسلح ہو کر یہ گروہ چیک پوسٹپر حملہ آور ہوا۔ادھر پی ٹی ایم کے دوسرے رہنما علی وزیر کی لوگوں کو چیک پوسٹ پر حملے کیلئے اکسانے کی ویڈیو سامنے آ گئی ہے۔ چھپے ہونے کے دوران بنائی گئی ویڈیو میں محسن داوڑ نے 2 بیئریرز عبور کرنے کا اعتراف کیا۔یاد رہے کہ گزشتہ دنوں محسن داوڑ اور علی وزیر گروپ نے شمالی وزیرستان میں چیک پوسٹ پر حملہ کر کے 5 فوجیوں کو زخمی کر دیا تھا، ان میں سے ایک زخمی جوان گل خان شہید ہو گیا تھا۔ا?ئی ایس پی آر کے مطابق شہید سپاہی گل خان جمرود ضلع خیبر کا رہائشی تھا۔ شہید سپاہی گل خان نے پسماندگان میں تین بیٹے اور ایک بیٹی سوگوار چھوڑی ہے۔محسن داوڑ نے ساتھیوں کے ہمراہ خرکمر میں چیک پوسٹ پر فائرنگ کی تھی۔ یہ لوگ دہشت گردوں کے سہولت کار کو چھڑانا چاہتے تھے۔

اعتراف

مزید :

صفحہ اول -