لوکل گورنمنٹ ایکٹ 2019ءکے خلاف دائر درجنوں درخواستوں پر وفاقی حکومت ،پنجاب حکومت اور الیکشن کمیشن کو نوٹس جاری

لوکل گورنمنٹ ایکٹ 2019ءکے خلاف دائر درجنوں درخواستوں پر وفاقی حکومت ،پنجاب ...

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائیکورٹ نے لوکل گورنمنٹ ایکٹ 2019ءکے خلاف دائر درجنوں درخواستوں پر وفاقی حکومت ،پنجاب حکومت اور الیکشن کمیشن کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کرلیاہے۔جسٹس مامون رشید شیخ کی سربراہی میں قائم تین رکنی فل بنچ نے کیس کی سماعت شروع کی تودرخواست گزاروں کے وکلاءنے کہا کہ نیابلدیاتی ایکٹ آئین کی صریحاً خلاف ورزی ہے ،منتخب مقامی نمائندوں کی معیاد کو یکسرختم کرکے ووٹرز کی توہین کی گئی۔

،نئے ایکٹ کے ذریعے لوکل گورنمنٹ سے انتظامی اور مالی اختیار واپس لے کر ماورائے آئین اقدام کیا گیا،عدالت لوکل گورنمنٹ ایکٹ کوماورائے آئین قرار دیتے ہوئے کالعدم کرے، جس پرعدالت نے وفاقی حکومت ،پنجاب حکومت اور الیکشن کمیشن کو 24جون کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کرلیاہے

مزید :

علاقائی -