سپریم کورٹ کراچی رجسٹری ،تہرے قتل کے ملزم ضمانت کی درخواست مسترد ہونے پر فرار

سپریم کورٹ کراچی رجسٹری ،تہرے قتل کے ملزم ضمانت کی درخواست مسترد ہونے پر فرار
سپریم کورٹ کراچی رجسٹری ،تہرے قتل کے ملزم ضمانت کی درخواست مسترد ہونے پر فرار

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں تہرے قتل کے ملزم ضمانت کی درخواست مسترد ہونے پر عدالت سے فرار ہو گئے ۔چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ نے ریمارکس دیئے ہیں کہ کیا ضمانت ہے اشتہاری قرار دینے کے بعد دوبارہ مفرور نہیں ہوں گے۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں تہرے قتل کیس کے ملزموں کی درخواست ضمانت پر سماعت ہوئی،حبیب اللہ اوراللہ بخش اپنے وکلا کے ساتھ عدالت میں پیش ہوئے، چیف جسٹس پاکستان نے استفسار کیا کہ ملزمان 2011 سے 2019 تک بھگوڑے رہے، ضمانت کیسے دے دیں؟کیا وجہ تھی جو ملزمان 7 سال مفرور رہے؟ چیف جسٹس نے کہا کہ ملزمان کو فریقین سے خطرہ تھا مگر قانون کا احترام نہیں تھا، کیا ضمانت ہے اشتہاری قرار دینے کے بعد دوبارہ مفرور نہیں ہوں گے، عدالت نے ملزم حبیب اللہ اوراللہ بخش کی ضمانت کی درخواست مسترد کردی جس پر ملزم عدالت سے فرارہو گئے ۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -