LUMS کے لڑکے لڑکیوں کی رقص کرتی ویڈیو نے سوشل میڈیا پر طوفان برپا کردیا

LUMS کے لڑکے لڑکیوں کی رقص کرتی ویڈیو نے سوشل میڈیا پر طوفان برپا کردیا
LUMS کے لڑکے لڑکیوں کی رقص کرتی ویڈیو نے سوشل میڈیا پر طوفان برپا کردیا

  

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) لاہور یونیورسٹی آف مینجمنٹ سائنسز کے لڑکے لڑکیوں کی ایک ایسی ویڈیو انٹرنیٹ پر وائرل ہو رہی ہے کہ جس نے ایک ہنگامہ برپا کر دیا ہے۔ ویب سائٹ ’مینگوباز‘کے مطابق بنیادی طور پر یہ طلبا و طالبات کے ایک گانے پر رقص کرنے کی یہ ویڈیو معروف ایپلی کیشن ’ٹک ٹاک‘ پر شیئرہوئی جو وہاں سے اٹھا کر معروف صحافی ارشاد بھٹی کے نام سے بنائے گئے ایک جعلی ٹوئٹر اکاﺅنٹ نے پوسٹ کر دی، جہاں کئی دیگر معروف شخصیات نے بھی اس پر کڑوے کسیلے کمنٹس کرنے شروع کر دیئے۔

رپورٹ کے مطابق یونیورسٹی میں گزشتہ دنوں ’پنک ڈے‘ منایا گیا تھا اور یہ ویڈیو اس روز کسی طالب علم نے بنا کر انٹرنیٹ پر پوسٹ کی گئی۔ ارشاد بھٹی کے اس جعلی اکاﺅنٹ پر جوابی ٹویٹس میں لوگ ان طلبہ و طالبات کو شدید تنقید کا نشانہ بنا رہے ہیں۔ حافظ محمد طیب نامی نوجوان نے لکھا کہ ”لمز ہی نہیں، اس طرح کے ایونٹس دیگر یونیورسٹیوں میں بھی ہوتے ہیں۔ جہاں بھی لڑکے لڑکیاں اکٹھے پڑھتے ہیں وہاں اس طرح کے کام ضرور ہوتے ہیں۔“ زیادہ تر لوگوں کو کہنا تھا کہ ماہ رمضان میں لمز کے ان طلبا و طالبات کو یہ حرکت نہیں کرنی چاہیے تھی مگر خدیجہ بلوچ نامی اس لڑکی جیسے بھی کچھ لوگ آئے جن کا کہنا تھا کہ ”رمضان میں ریپ ہوتے ہیں، قتل ہوتے ہیں، بچے اغواءہوتے ہیں اور جسم فروشی کے لیے فروخت کیے جاتے ہیں، اس کی کسی کو فکر نہیں ہے ۔ ہمیں لمز کے ان طالب علموں کے ڈانس کی فکر ہے۔ ہم بھی کیسی بے عقل قوم ہیں۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -علاقائی -پنجاب -لاہور -