محسن داوڑ نے امریکی صدر ٹرمپ سے پاک فوج کے خلاف مدد مانگ لی

محسن داوڑ نے امریکی صدر ٹرمپ سے پاک فوج کے خلاف مدد مانگ لی
محسن داوڑ نے امریکی صدر ٹرمپ سے پاک فوج کے خلاف مدد مانگ لی

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاک فوج کی چیک پوسٹ پر حملے کے بعد فرار ہونے والے پشتون تحفظ موومنٹ (پی ٹی ایم) کے مرکزی رہنما محسن داوڑ نے پاک فوج کے خلاف امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے مدد مانگ لی۔

پاک فوج کے خلاف پی ٹی ایم اور افغان خفیہ ایجنسی این ڈی ایس یک زبان ہوگئے۔ دونوں نے مل کر پاک فوج کے خلاف بھرپور پراپیگنڈا شروع کردیا جس کا عملی مظاہرہ بدھ کے روز اس وقت دیکھنے میں آیا جب افغان خفیہ ایجنسی کے سابق سربراہ نے نہ صرف پی ٹی ایم کی کھل کر حمایت کی بلکہ ٹرمپ سے مدد کی اپیل بھی کی۔

این ڈی ایس کے سابق سربراہ رحمت اللہ نبیل نے اپنے ایک ٹویٹ میں صدر ٹرمپ کو پیغام دیا ’ محسن داوڑ نے کہا ہے کہ پاک فوج کو وزیرستان سے نکالا جائے، پشتون تحفظ موومنٹ وزیرستان میں انصاف کے حصول کی جدو جہد کر رہی ہے، امریکہ سمیت عالمی برادری اور صدر ٹرمپ کو پی ٹی ایم کی کوششوں کی حمایت کرنی چاہیے کیونکہ وہ لوگ چاہتے ہیں کہ شمالی وزیرستان کو دہشتگردوں سے پاک کیا جائے اور امریکہ بھی ایک عرصے سے یہی چاہتا ہے‘۔

پی ٹی ایم کے مرکزی رہنما اور رکن قومی اسمبلی محسن داوڑ نے این ڈی ایس کے سابق سربراہ کی مدد کی اپیل کی نہ صرف حمایت کی ہے بلکہ انہوں نے یہ دھمکی بھی دی ہے کہ پاک فوج وزیرستان سے چلی جائے ورنہ کوئی جوان وزیرستان سے زندہ واپس نہیں جائے گا۔

ٹوئٹر@RahmatullahN

مزید :

Breaking News -اہم خبریں -قومی -