فرشتہ کے ساتھ زیادتی نہیں ہوئی ،ڈی این اے رپورٹ میں انکشاف ،ملزم نے معصوم بچی کو قتل کیوں کیا ؟وجہ بھی سامنے آگئی

فرشتہ کے ساتھ زیادتی نہیں ہوئی ،ڈی این اے رپورٹ میں انکشاف ،ملزم نے معصوم بچی ...
فرشتہ کے ساتھ زیادتی نہیں ہوئی ،ڈی این اے رپورٹ میں انکشاف ،ملزم نے معصوم بچی کو قتل کیوں کیا ؟وجہ بھی سامنے آگئی

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن ) دس سالہ فرشتہ قتل کیس تحقیقات میں انکشاف ہوا ہے کہ بچی کے ساتھ زیادتی کی کوشش ہوئی تاہم ڈی این اے رپورٹ میں یہ ثابت نہیں ہوئی۔پولیس حکام کے مطابق وقوعہ کی جگہ سے ملنے والے سگریٹ اور جوس کے ڈبو ں سے مشکوک ڈی این اے سیمپل ملے ہیں ،ملزمان کو چوبیس سے چھبیس گھنٹے کے دوران پکڑ کر میڈ یا کے سامنے پیش کردیا جائے گا ۔ فرشتہ نے زیادتی سے بچنے کے لیے مزاحمت کی۔ بچی نے ملزم کو شناخت کر لیا تھا جس پر ملزم نے اس کی ناف پر خنجر مارا۔پولیس نے بتایا کہ خنجر لگنے سے فرشتہ کا کافی زیادہ خون بہہ گیا اور اس کی موت واقع ہوگئی۔

واضح رہے کہ وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کے علاقے چک شہزاد سے 15 مئی کو لاپتہ ہونے والی بچی فرشتہ کی مسخ شدہ نعش جنگل سے برآمد ہوئی تھی جس کے ملزمان تاحال گرفتار نہیں ہو سکے۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -راولپنڈی -