نیلم جہلم سرچارج کی بلا جواز وصولی

نیلم جہلم سرچارج کی بلا جواز وصولی

  

اطلاعات و نشریات کے متعلق وزیراعظم کے معاونِ خصوصی اور سی پیک اتھارٹی کے سربراہ لیفٹیننٹ جنرل(ر) عاصم سلیم باجوہ نے کہا ہے کہ بجلی کی قیمت کم کرنا حکومت کی اولین ترجیح ہے، سکی کناری ہائیڈرو پاور پراجیکٹ پر کام تیز رفتاری سے جاری ہے،50فیصد کام مکمل ہو چکا ہے…… اِس وقت دریاؤں میں پانی کے تیز بہاؤ کی وجہ سے ہائیڈل بجلی کی پیداوار میں بھی اضافہ ہو گیا ہے اور تیل کی عالمی قیمتوں میں غیر معمولی کمی کے باعث تھرمل بجلی بھی سستی بن رہی ہے،لیکن ابھی تک بجلی کی فی یونٹ قیمتیں کم کرنے کا کوئی اقدام سامنے نہیں آیا،اس لحاظ سے معاونِ خصوصی اطلاعات کا اعلان خوش آئند ہے، تاہم عوام امید رکھتے ہیں کہ سستی بجلی کے متعلق کوئی اعلان جلد ہی سامنے آئے گا۔ حیرت انگیز طور پر بجلی کے بلوں پر نیلم جہلم سرچارج ابھی تک وصول کیا جا رہا ہے، حالانکہ یہ پاور پراجیکٹ طویل عرصے سے مکمل ہو کر پیداوار بھی دے رہا ہے اور بجلی پر منافع بھی حاصل کر رہا ہے،اِس لئے اب یہ سرچارج وصول کرنے کا تو کوئی جواز باقی نہیں رہ گیا،اِس لئے یہ تو فوراً ختم کر ہی دینا چاہئے،سستی تھرمل بجلی کا فائدہ بھی عوام کو منتقل کرنا ضروری ہے۔مزید براں اگر ریلیف دینا حکومت کے پیش ِ نظر ہو تو جی ایس ٹی بھی کم(یا ختم)کیا جا سکتا ہے۔ہماری درخواست ہے کہ معاونِ خصوصی اطلاعات اِس جانب حکومت کی توجہ مبذول کرائیں اور بجلی کی قیمتیں کم کرنے سے پہلے نیلم جہلم سرچارج کی وصولی تو ختم کرا دیں۔

مزید :

رائے -اداریہ -