عید الفطر‘پنجاب ایمرجنسی سروس نے 18728ایمرجنسی کارروائی کی

عید الفطر‘پنجاب ایمرجنسی سروس نے 18728ایمرجنسی کارروائی کی

  

لاہور(پ ر) ڈائریکٹر جنرل پنجاب ایمر جنسی سروس ڈاکٹر رضوان نصیر نے کہا کہ پنجاب بھر میں عید کی تعطیلات کے دوران 18728ایمرجنسیز پر ریسپانڈ کرتے ہوئے 19285لوگوں کو ریسکیو سروس فراہم کی جبکہ پنجاب بھر میں 11,130ریسکیورز نے عید کے دوران 24گھنٹے 3شفٹوں میں کام کرتے ہوئے حادثات کے شکار لوگوں کو بروقت ریسکیو سروس فراہم کی۔ انہون نے کہا کہ عید کے دنوں ریسکیو سروس نے 7065روڈٹریفک حادثات پرریسپانڈ کیاجن میں 71لوگ جان کی بازی ہار گئے جبکہ دیگر اقسام کی ایمرجنسز جسمیں 8892میڈیکل ایمرجنسیز، 509آتشزدگی کے واقعات،712کرائم سے متعلقہ واقعات، 71ڈوبنے کے واقعات پر بھی ریسپانڈ کیا۔ان خیالات کا اظہار گزشتہ روزڈی جی ریسکیوپنجاب ڈاکٹر رضوان نصیر نے ریسکیو کو ہید کوارٹرز میں منعقدہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا جس میں ہیڈ کواٹرز اور اکیڈمی کے تما م شعبہ جات کے سربراہان بھی شامل تھے۔ انہوں نے عید کے دنوں میں بڑھتے ہوئے روڈ ٹریفک حادثات اور پانی میں ڈوب کر مرنیوالی قیمتی انسانی جانوں کے ضیائع پر گہری تشویش کا اظہارکیا۔ انہوں نے بتایا کہ ان حادثات میں 8374افراد شدید زخمی ہوئے جبکہ 71افراد جان بحق ہو گئے۔ کل زخمی ہونے والے افراد میں 751افراد کو سر کی چوٹ، 384افراد ملٹی فریکچر، 1298افراد سنگل فریکچر 113افرادکمر کی چوٹ،جبکہ 5828افراد معمولی زخمی ہوئے جنہیں موقع پر ہی ابتدائی طبی امداد فراہم کی گئی۔

اس موقع پر ہیڈ آف صوبائی مانیٹرنگ سیل نے ڈی جی ریسکیو پنجاب کو بتایا کہ عید کے دوران سب سے زیادہ حادثات ضلع لاہور، فیصل آباد،ملتان، بہاولپوراور ساہیوال میں رونما ہوئے۔ پنجاب ایمرجنسی سروس نے لاہور میں 2237پر ریسپانڈ کیا جن میں 1120روڈ ٹریفک حادثات تھے، فیصل آباد میں 1730ایمرجنسیز جن میں 626روڈ ٹریفک حادثات،ملتان میں 1156جن میں 529روڈ ٹریفک حادثات، بہاولپور میں 913ایمرجنسیز جن میں 291روڈ ایکسڈنٹ اورساہیوال میں 939ایمرجنسیزجن میں 305ٹریفک حادثات رونما ہوئے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ تمام ضلعی ایمرجنسی سروسز نے متعلقہ ڈپٹی کمشنر کے ساتھ مل کر عید الفطرکے لئے خصوصی "ایمرجنسی ریسکیو پلانز"کو نافذالعمل کیا۔ مانیٹرنگ سیل نے کو مزید آگاہ کیا کہ پنجاب بھر میں 11,130ریسکیورز کو عید کی تعطیلات کے مو قعے پر تعینات کیا گیاتھا جو کسی بھی نا گہانی صورت حال ایمرجنسی،سانحہ،یا کسی بھی ناگہانی آفات سے نبردآزما ہونے کیلئے ہمہ وقت تیار رہے جبکہ 11,130ریسکیورز نے تین شفٹوں میں 650قائم کردہ کی پوائنٹس بشمول 250ایمرجنسی وہیکلز اور400موٹر بائیک ایمبولینس سروس پراپنی خدمات سرانجام دی۔ اس کیساتھ ساتھ اہم مقامات، مساجد اورعید گاہوں پرایمبولینس اور فائر وہیکل کی تعیناتی کے ساتھ سا تھ ریسکیو موبائل پوسٹیں بھی قائم کی گئی تھی جہاں کسی بھی قسم کے ناگہانی کی صورت میں ایمرجنسی کورفراہم کرنے کے لئے تربیت یافتہ ایمرجنسی پیرا میڈیکل سٹاف موجودرہا۔عید کی چھٹیوں کے دوران کسی بھی ایمرجنسی صورت حال سے نمٹنے کے لیے ریسکیو 1122تمام اضلاع میں ایمرجنسیز سے بہتر انداز میں نبرد آزما ہونے کے لئے ہر دم تیار رہا۔

اس مو قع پر ڈی جی ریسکیو پنجاب نے کہا کہ روڈ سیفٹی اقدامات اور روڈ سیفٹی قوانین پر عمل پیرا ہو کر روڈ ٹریفک حادثات میں کمی لائی جا سکتی ہے کیونکہ انسانی زندگی سے زیادہ کوئی چیز اہم نہیں ہے۔ انہوں نے تمام ڈرائیوروں سے اور بالخصوص موٹر سایئکل ڈرائیوروں کو احتیاط سے ڈرایؤنگ کرنے کی درخواست کی ہے کیونکہ 80فیصد حادثات میں موٹر سائیکل سوار ہی شامل ہوتے ہیں۔ انہوں نے عوام الناس سے درخواست کی کہ کسی بھی ایمرجنسی کی صورت میں بر وقت 1122ڈائل کریں کیونکہ وقت پر کال کرنے سے بر وقت ریسکیو سروس فراہم کی جاتی ہے جس سے قیمتی جانیں بچ جاتی ہیں ڈاکٹر رضوان نصیر نے ریسکیو رز کو زبردست خراج ِتحسین پیش کیاجنہوں عید کے دوران ڈیوٹی کرتے ہوئے لوگوں کو ریسکیو سروس فراہم کیں۔

مزید :

کامرس -