رینٹل انکم پر ٹیکس کم کر کے 10فیصد کیا جائے: اسلام آباد چیمبر

رینٹل انکم پر ٹیکس کم کر کے 10فیصد کیا جائے: اسلام آباد چیمبر

  

اسلام آباد (کامر س ڈیسک) اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر محمد احمد وحید نے کہا کہ رینٹل انکم پرٹیکس کو بڑھا کر 35فیصد کردیا گیا جس سے کرایوں میں کئی گنا اضافہ ہوا ہے اور کاروباری کمپنیوں کیلئے مہنگے کرایے ادا کرنا مشکل ہو گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ خاص طور پر کرونا وائرس اور لاک ڈاؤن کی وجہ سے بہت سی کاروباری کمپنیوں کو کرایوں کی ادائیگی میں شدید مشکلات کا سامنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ رینٹل انکم پر 35فیصد ٹیکس عائد ہونے سے اسلام آباد بہت مہنگا شہر بن گیا ہے لہذا ضرورت اس بات کی ہے کہ اس ٹیکس میں مناسب کمی کی جائے جس سے کاروباری طبقے اور عوام کی مشکلات کم ہوں گی۔ لہذا انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ آئندہ بجٹ میں رینٹل انکم پر ٹیکس کم کر کے 10فیصد فائنل ٹیکس عائد کیا جائے جس سے کرایوں میں واضح کمی واقع ہو گی، کاروباری طبقے کے مسائل کم ہوں گے، کاروباری سرگرمیوں کو بہتر فروغ ملے گا اور حکومت کے ٹیکس ریونیو میں بھی اضافہ ہو گا۔ محمد احمد وحید نے کہا کہ رینٹل انکم پر پہلے 10فیصد فائنل ٹیکس عائد تھا جس سے کرایہ داربھی مطمئن تھے اور حکومت کے ٹیکس ریونیو میں بھی اضافہ ہو رہا تھا۔ لیکن بعد میں اس ٹیکس کی 8سلیب بنا دی گئی اور زیادہ سے زیادہ ٹیکس بڑھا کر 35فیصد کر دیا گیا جس سے نہ صرف دکانوں کے کرایوں میں غیر ضروری اضافہ ہوا ہے اور کاروباری طبقے کی مشکلات بھی بڑھی ہیں بلکہ اس سے ٹیکس چوری کی بھی حوصلہ افزائی ہوئی ہے۔ لہذا انہوں نے مطالبہ کیا کہ آئندہ بجٹ میں رینٹل انکم پر ٹیکس عائد ٹیکس پر نظر ثانی کی جائے اور 10فیصد فائنل ٹیکس عائد کیا جائے جس سے کرایے کم ہوں گے، کاروباری سرگرمیوں میں تیزی آئے گی اور حکومت کے ٹیکس ریونیو میں بھی اضافہ ہو گا کیونکہ زیادہ لوگ ٹیکس نیٹ میں آئیں گے۔

مزید :

کامرس -