ملک کے ایک اور ممتاز عالم دین داعی اجل کو لبیک کہہ گئے

ملک کے ایک اور ممتاز عالم دین داعی اجل کو لبیک کہہ گئے
ملک کے ایک اور ممتاز عالم دین داعی اجل کو لبیک کہہ گئے

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستان کے بزرگ رہنما اور ممتاز عالم دین مولانا عبدالرشید راشد ہزاروی مختصر علالت کے بعد انتقال کر گئے، ان کی عمر85 برس تھی،مولانا عبدالرشید راشد ہزاروی کی نماز جنازہ کل30مئی بروز ہفتہ شام 5 بجے فریدیہ پارک ساہیوال میں ادا کی جائے گی۔

تفصیلات کے مطابق ممتاز عالم دین مولانا عبدالرشید راشد ہزاروی مختصر علالت کے بعد انتقال کر گئے، ان کی عمر85 برس تھی،

انہوں نےسوگواران میں چار بیٹے چھوڑے ہیں،مولانا عبدالرشید راشد ہزاروی ضعیف العمری کے باجود دعوت وتبلیغ کی سرگرمیوں میں آخری وقت تک حصہ لیتےرہے،مختصرعلالت کےباعث سول ہسپتال ساہیوا ل میں داخل ہوئےجہاں وہ جانبر نہ ہوسکے۔سینیٹر علامہ ساجدمیر،ناظم اعلی ڈاکٹر حافظ عبدالکریم، چیف آرگنائزر حافظ ابتسام الہی ظہیر سمیت جماعت کےجیدعلماء نےمرحوم کی وفات پردلی افسوس کااظہارکیاہے۔علامہ ساجد میر نے کہا کہ مولانا ہزاروی جماعت کے دیرینہ اور مخلص رہنما تھے،ا ن کی دینی، سیاسی اور دعوتی خدمات ہمیشہ یاد رکھی جائیں گی،ان کی وفات سے ملک ایک جید عالم دین سے محروم ہو گیا ہے۔

مولانا عبدالرشید راشد ہزاروی دارالحدیث اوکاڑہ کے مدیر اور شیخ الحدیث تھے،جامعہ ثنائیہ ساہیوال میں خطیب تھے۔ تحریک تحفظ ختم نبوتﷺ میں انہوں نے قید وبند کی صعوبتیں بھی برداشت کیں،مولانا عبدالرشید راشد ہزاروی مرکزی جمعیت اہل حدیث پنجاب کے امیر اور ناظم کے مناصب پر بھی فائز رہے،صوفی عبداللہ، مولاناقاضی اسلم سیف، مولانا عبداللہ امجد چھتوی مرحوم کے قریبی ساتھی تھے۔ اوڈانوالہ اور ماموں کانجن کے مدارس میں تعلیم حاصل کی اور پھر وہیں مدرس بھی رہے۔گزشتہ پچاس سال سے وہ ساہیوال اور اوکاڑہ کے اضلاع میں دین کی نشرواشاعت اور دعو ت و تبلیغ کا کام کررہے تھے۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -