قوم ایک دن ضرور پوچھے گی ہم نے اپنے محسنوں کیساتھ کیا سلوک کیا؟ مسلم لیگ (ن)

  قوم ایک دن ضرور پوچھے گی ہم نے اپنے محسنوں کیساتھ کیا سلوک کیا؟ مسلم لیگ (ن)

  

 لاہور(این این آئی)پاکستان مسلم لیگ (ن) کے سینئر مرکزی رہنما خواجہ سعد رفیق نے ملکی ایٹمی پروگرام میں اپنا اپنا حصہ ڈالنے والوں کو محسنان پاکستان قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ قوم ایک دن سوال ضرور پوچھے گی کہ ہم نے نواز شریف سمیت اپنے ان تمام محسنوں کے ساتھ کیا سلوک کیا؟،نواز شریف کو سی پیک کا دھماکہ کرنے کی سزا تو ملنی ہی تھی لیکن ہم نہیں چاہتے کہ موجودہ حکمرانوں کے ساتھ وہ کچھ ہو جو ہمارے ساتھ ہوا، حکومت امریکہ کو مبینہ طور پر فضائی اور زمینی اڈے دینے کی خبر کی وضاحت کرے،افغانستان پر حملہ کرنے والوں کو شکست ہو رہی ہے تو انہیں اپنا کندھا فراہم کرنے کے شدید نقصانات ہو سکتے ہیں، اس معاملے پر کابینہ سمیت پارلیمان کو اعتماد میں لیاجائے،ووٹ کو عزت دینے اور تمام آئینی اداروں کے اپنی اپنی حدود میں کام کرنے تک ایٹمی قوت ہونے کے ثمرات نہیں سمیٹے جا سکتے،نواز شریف نے بھی یہی کہا تھا کہ اپنے گھر کو ٹھیک کیا جائے،اب وقت آ گیا ہے کہ ملکی پالیسی ساز سمیت سب اپنا اپنا احتساب کریں کیونکہ موجودہ حالات میں کوئی اکیلا ملک کو آگے لے کر نہیں چل سکتا۔ان خیالات کا اظہا ر ایوم تکبیر کے حوالے سے مسلم لیگ (ن) کے مرکزی سیکرٹریٹ ماڈل ٹاؤن میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ تقریب میں اراکین اسمبلی سمیت کارکنوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔ خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ یوم تکبیر کی تقریب کے انعقاد پر مسلم لیگ (ن) لاہور کی قیادت کو مبارکباد پیش کرتا ہوں،پاکستان 28 مئی کو عالم اسلام کی پہلی اور دنیا کی 7ویں ایٹمی قوت بنا ہم آج تک اپنے لوگوں کو پینے کا صاف پانی اور رہنے کو گھر نہیں دے سکے،دشمنوں میں گھرے ملک کا ایٹمی قوت بن جانا معجزے سے کم نہیں بھارت کے ایٹمی دھماکوں کے بعد پاکستان پر دنیا بھر اور ملک کے اندر سے دباؤ آیا کہ ایٹمی دھماکے نہ کئے جائیں ورنہ معاشی پابندیاں لگ جائیں گی،کسی نے قرضہ اتارنے اور کسی نے عالمی طاقتوں سے جھگڑا مول نہ لینے کے مشورے دئیے لیکن نواز شریف نے تاریخ ساز فیصلہ کیا جس کے اثرات بہت دور تک گئے،ہم میں حوصلہ ہونا چاہیے کہ اس ایٹمی پروگرام کا کریڈٹ جس کا بھی بنتا ہے اسے ضرور دیا جائے،ذوالفقار علی بھٹو، ضیا ء الحق، بینظیر بھٹو اور نواز شریف سمیت سب نے ایٹمی پروگرام کو آگے بڑھایا،سائنسدان، افواج پاکستان، خفیہ اداروں نے بے انتہا کام کیا اور وہ اس پروگرام کے ہیرو ہیں،  سوال یہ ہے کہ کیا ایٹمی قوت بننے سے سارے مسائل حل ہو گئے ہیں؟،ووٹ کو عزت دینے، اپنی اپنی آئینی حدود میں کام کرنے تک آپ ایٹمی قوت کے ثمرات نہیں سمیٹ سکتے،اگر ہم نے ہیروز کی تذلیل نہ کی ہوتی تو آج بھارت مقبوضہ کشمیر کو ہڑپ نہ کر چکا ہوتا، قومی سلامتی کے معاملے پر سوال پوچھناہمارا حق اور فرض ہے اگر آپ پارلیمان کو بھی اعتماد میں نہیں لیتے تو پھر کس کو اعتماد میں لیں گے،پاکستان اپنی فضائی اور زمینی حدود کے استعمال کی اجازت دے رہا ہے تو اس کے ہمسایوں، دوست ممالک اور معیشت پر کیا اثرات پڑینگے،افغانستان پر حملہ کرنے والوں کو شکست ہو رہی ہے تو انہیں کندھا کیوں فراہم کیا جا رہا ہے؟۔انہوں نے کہا کہ آپ کو پارلیمان کو اعتماد میں لینا پڑے گا، آپ قوم سے چھپاتے کیوں ہیں،ان سوالات کا جواب آج ہم یوم تکبیر پر حکومت سے مانگتے ہیں،پا  ڈیڑھ سال مجھے جیل میں رکھا گیا لیکن سپریم کورٹ نے کمال فیصلہ کیا،  پاکستان مسلم لیگ (ن)لاہور کے جنرل سیکرٹری خواجہ عمران نذیر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پوری قوم، عالم اسلام اور مسلم لیگ (ن) کے شیروں کو یوم تکبیر پر مبارکباد دیتا ہوں ایٹمی پروگرام کو نواز شریف نے منطقی انجام تک پہنچایا،نواز شریف کو کبھی دھمکی دی گئی تو کبھی لالچ دیا گیا  لیکن بعد میں آنے والے حکمران ایک فون کال پر ہی ڈھیر ہوتے رہے۔ا آج کے حکمرانوں نے قوم کو بھکاری بنا کر رکھ دیا ہے  وہ وقت بھی جلد آئے گا جب نواز شریف وطن واپس آئیں گے تو ہم ان کا شایان شان استقبال کرینگے۔ 

مسلم لیگ ن 

مزید :

صفحہ اول -