برساتی نالوں کی صفائی کا عمل پوری رفتارسے جاری ہے، نجم شاہ

      برساتی نالوں کی صفائی کا عمل پوری رفتارسے جاری ہے، نجم شاہ

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)سندھ حکومت برساتی نالوں کی صفائی اور مستقل حل کے لئے سنجیدہ کاوشوں میں مصروف عمل نظر آرہی ہے۔ گزشتہ روز برساتی نالوں کی صفائی کے آغاز سے اب تک لگاتار جاری کام اس بات کا واضع ثبوت ہے کہ لوگوں کی بہبود اور سہولت کے لئے محکمہ بلدیات سندھ ہمہ وقت تیار اور کمر بستہ ہے۔ سیکرٹری بلدیات سندھ سید نجم احمد شاہ نے بتایا کہ گزشتہ روز آغاز ہونے والی نالوں کی صفائی مہم میں کل دن کے اختتام تک ایک سو بارہ ڈمپرز میں برساتی نالوں سے نکالے جانے والا کچرا لینڈ فل سائٹس تک منتقل کیا گیا ہے جو کہ نہایت ہی حوصلہ افزا کارکردگی ہے۔ نجم احمد شاہ کے مطابق نالوں سے نکالے جانے والا تمام کچرا ایس او پیز کی پیروی کے تحت جام چاکرو اور گوند پاس لینڈ فل سائٹس پر منتقل کیا جارہا ہے۔ سیکرٹری لوکل گورنمنٹ سندھ نے آگاہ کیا کہ ڈسٹرکٹ ایسٹ، ساوتھ، ویسٹ، ملیر، کورنگی اور بلدیہ وسطی کے پچیس نالوں میں سے یہ کچرا نکالا گیا ہے۔ ڈسٹرکٹ ایسٹ میں واقع  سونگل نالہ، پہلوان گوٹھ نالہ، چکور نالہ، نیپا چورنگی نالہ اور محمود آباد نالہ صاف کیا گیا۔ ڈسٹرکٹ ساوتھ میں واقع پچر نالہ،کرلی نالہ، سولجر بازار نالہ، سٹی نالہ اور فرئیر نالہ کلئیر کیا گیا۔ ڈسٹرکٹ ویسٹ کی حدود میں شیر شاہ نالہ، موچکو نالہ، بیس مسرور نالہ اور حب ریور روڈ نالہ کی صفائی کی گئی۔ ضلع ملیر میں مہران کٹ نالہ اور بھینس کالونی والے نالے کو کلئیر کیا گیا۔ ڈسٹرکٹ کورنگی کی حدود میں CBM نالہ، 8000روڈ نالہ،12000روڈ نالہ اور 10000روڈ نالہ بھی صاف کیا گیا۔بلدیہ وسطی کے قلندریہ نالہ، ناگن چورنگی نالہ، کے ڈی اے چورنگی نالہ، رشید ترابی روڈ نالہ اور شاہراہ نور جہاں نالے کی صفائی عمل میں لائی گئی۔ انجینئر سید نجم احمد شاہ نے بتایا کہ نالوں کے صفائی کے عمل کے لئے قائم کردہ کمیٹی کے اراکین ہمہ وقت فعال اور میدان عمل میں موجود ہیں اور باقاعدہ مانیٹرنگ کے عمل کے ذریعے سارے پراسس کی نگرانی بھی جارہی ہے۔ نجم احمد شاہ نے واضع کیا کہ برساتی نالوں کی صفائی کے حوالے سے کنٹریکٹرز کو ادائیگی تشکیل کردہ کمیٹی کی سفارش پر عمل میں لائی جائے گی اور کسی بھی طرح کی اقربا پروری یا اثر پذیری کو خاطر میں نہیں لایا جائے گا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -