پنجاب بینک کی مصور آ گسٹ شیوفٹ کی پینٹنگ کی بحالی کیلئے مالی مدد

 پنجاب بینک کی مصور آ گسٹ شیوفٹ کی پینٹنگ کی بحالی کیلئے مالی مدد

  

لاہور(خصوصی رپورٹ)دی بینک آف پنجاب اپنی کاروپوریٹ سماجی ذمہ داری سے عہدہ برا ہونے کیلئے ٹھوس اقدامات کے ساتھ پیش پیش ہے۔ بی او پی نے لاہور قلعہ میں موجود شہزادی بمبا کی کولیکشن میں موجود ہنگری کے مصور آ گسٹ شیوفٹ کی پینٹنگ کی بحالی کے لیے مالی مدد فراہم کی۔ یہ پینٹنگ ہماری تاریخ کے بہت اہم حصے کو بیان کرتی ہیں اور پاکستان اور ہنگری کے مشترکہ ورثے کی علامت ہیں۔ یہ پینٹنگز لمبے عرصے سے خستہ حالی اور شکست و ریخت کا شکار تھیں۔  ہنگری کے ماہرین حکومتی عہدداران اور بینک آف پنجاب کے تعاون سے ان نادر پینٹنگز کو اصل حالت میں بحال کر رہے ہیں۔دی بینک آف پنجاب اور ہنگر ی کے سفارتخانے ان پینٹنگز کی بحالی کے کام پرلاہور قلعہ میں بریفنگ کا انعقاد کیا۔ ہنگری کے سفیر برائے پاکستان اور دی بینک آف پنجاب کے صدر کے علاوہ ہنگری کے سفارتخانے کے عہدداران، بی او پی کی سینئر مینجمنٹ اور والڈ سٹی اتھارٹی کے عہدداران نے تقریب میں شرکت کی۔بی او پی کے صدر ظفر مسعود نے اس موقع پر بات کرتے ہوئے کہا کہ بی او پی بین الاقوامی ورثے کی حفاظت کیلئے مصروف عمل ہے کہ اور ان ناردر پینٹنگز کی بحالی دونوں دوست اقوام کے تعلقات میں بہتری کیلئے بہت اہم کردار ادا کریں گی۔ بی او پی ہمیشہ سماجی ذمہ داری کے اقدامات میں پیش پیش رہا ہے۔ بینک اس بحالی کے منصوبے میں شمولیت پر فخر محسوس کرتا ہے اور آئندہ بھی ثقافتی ورثے کو محفوظ بنانے کیلئے کردار ادا کرتا رہے گا۔ہنگری کے سفیر برائے پاکستان بیلا فازکاس نے کہا کہ شوفٹ کے فن پاروں کی بحالی پاکستان اور ہنگری کے ثقافتی تعاون کا اہم منصوبہ  ہے۔  اس کا سب سے زیادہ فائدہ پاکستان کی عوام کو ہو گا جو اپنے ثقافتی ورثے ان نادر نمونوں کو اپنی اصل حالت میں دیکھ سکیں گے۔ انھوں نے اس منصوبے میں بینک آف پنجاب کے تعاون کو سراہتے ہوئے شکریہ ادا کیا۔دی بینک آف پنجاب نے اس ثقافتی ورثے کو آنے والی نسلوں کے لیے محفوظ رکھنے کیلئے پینٹنگز درست طریقہ کار سے رکھنے کیلئے مدد کی پیشکش بھی کی ہے۔ یہ پینٹنگز بحالی کے بعد عوام کیلئے نمائش عام کے دوران دستیاب ہوں گی۔  

تصاویر

مزید :

صفحہ آخر -